آئی ایس سے وابستہ جرمن لڑکی گھر واپس جانا چاہتی ہے

برلن۔ عراق میں سیکورٹی دستوں کے زیر حراست دہشت گرد تنظیم اسلامک اسٹیٹ (آئی ایس) سے وابستہ جرمنی کی 16 سالہ لڑکی کو اب خود کے فیصلے پر افسوس ہورہا ہے اور وہ اپنے کنبے کے پاس واپس جانا چاہتی ہے۔

Jul 24, 2017 12:47 PM IST | Updated on: Jul 24, 2017 12:47 PM IST

برلن۔ عراق میں سیکورٹی دستوں کے زیر حراست دہشت گرد تنظیم اسلامک اسٹیٹ (آئی ایس) سے وابستہ جرمنی کی 16 سالہ لڑکی کو اب خود کے فیصلے پر افسوس ہورہا ہے اور وہ اپنے کنبے کے پاس واپس جانا چاہتی ہے۔ مقامی میڈیا کے مطابق یہ لڑکی ان چار جرمن خواتین میں شامل ہے جو آئی ایس سے وابستہ تھیں۔ ڈریسڈن میں سینئر سرکاری پراسیکیوٹر لورینز ہاسے نے کہا کہ لنڈا ڈبلیو نامی لڑکی کی شناخت کرلی گئی ہے اور وہ عراق میں ہے۔ اسے قونصلر کی مدد مہیا کرائی جا رہی ہے۔ جرمنی کے متعدد نیوز گروپوں نے بتایا کہ انہوں نے بغداد میں ایک فوجی احاطہ کے اسپتال میں لنڈا ڈبلیو کا انٹرویو کیا تھا اور لنڈا نے ان سے کہا کہ وہ اس جگہ کو چھوڑنا چاہتی ہے۔

لنڈا نے کہا کہ ’’میں یہاں سے دور جانا چاہتی ہوں، جنگ کے علاقے، ہتھیاروں اور شور و غل سے دور جانا چاہتی ہوں۔ میں اپنے گھر اور کنبے کے پاس واپس جانا چاہتی ہوں‘‘۔ لنڈا نے کہا کہ اسے آئی ایس میں شامل ہونے پر افسوس ہے اور وہ جرمنی میں خود سپردگی کرنا چاہتی ہیں جہاں وہ حکام کے ساتھ تفتیش میں پورا تعاون کرے گی۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق اس کی بائیں ران پر گولی کا نشان اور زخم ہے اور اس کا دایاں گھٹنا بھی زخمی ہے۔ اس نے بتایا کہ اسے یہ چوٹ ہیلی کاپٹر حملے کے دوران لگی۔ لنڈا نے کہا کہ ’’اب میں صحیح سلامت ہوں اور میری حالت میں بہتری ہو رہی ہے۔

آئی ایس سے وابستہ جرمن لڑکی گھر واپس جانا چاہتی ہے

لنڈا نے کہا کہ ’’میں یہاں سے دور جانا چاہتی ہوں، جنگ کے علاقے، ہتھیاروں اور شور و غل سے دور جانا چاہتی ہوں۔ میں اپنے گھر اور کنبے کے پاس واپس جانا چاہتی ہوں‘‘۔ : تصویر، یو این آئی

Loading...

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز