حقانی نیٹ ورک اور حافظ سعید جیسے عناصر ملک کیلئے بوجھ ، جان چھڑانے کیلئے چاہیے وقت : پاکستانی وزیر خارجہ

Sep 27, 2017 11:58 PM IST | Updated on: Sep 27, 2017 11:58 PM IST

نیویارک : پاکستانی وزیر خارجہ خواجہ آصف نے کہا ہے کہ حقانی نیٹ ورک اور حافظ سعید جیسے عناصر پاکستان کے لیے ایک لائبیلیٹی یا بوجھ ہیں مگر ان سے جان چھڑانے کے لیے پاکستان کو وقت چاہیے۔نیویارک میں ایشیا سوسائٹی کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے انھوں نے کہا کہ پاکستان میں ایسے لوگ موجود ہیں جو بحران کی صورت میں پاکستان اور خطے کے لیے ایک لائبیلیٹی یا بوجھ ثابت ہو سکتے ہیں۔

تقریب کے میزبان امریکی صحافی کے ایک سوال کے جواب میں خواجہ آصف نے کہا کہ پاکستان میں ایسے لوگ موجود ہیں جو بحران کی صورت میں پاکستان اور خطے کے لیے ایک بوجھ ثابت ہو سکتے ہیں۔ ہمارے پاس ان سے جان چھڑانے کے وسائل نہیں ہیں۔ حافظ سعید کی تنظیم کالعدم ہے اور وہ نظربند ہیں مگر میں آپ سے متفق ہوں کہ اس سلسلے میں ہمیں مزید اقدامات کرنے ہوں گے۔

حقانی نیٹ ورک اور حافظ سعید جیسے عناصر ملک کیلئے بوجھ ، جان چھڑانے کیلئے چاہیے وقت : پاکستانی وزیر خارجہ

میڈیا رپورٹس کے مطابق وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ وہ اس خیال سے بھی متفق ہیں کہ پاکستان کو شدت پسندی اور دہشت گردی کی باقیات کے خاتمے کے لیے اپنی کوششیں جاری رکھنی چاہئیں۔ بلاشبہ ہم نے غلطیاں کی ہیں لیکن صرف ہمیں مورد الزام ٹھہرانا ناانصافی ہے۔ امریکہ کو سوویت یونین کے خلاف سرد جنگ جیتنے کے بعد خطے کو ایسے چھوڑ کر نہیں جانا چاہیے تھا، اس کے بعد سے ہم جہنم میں چلے گئے اور آج تک اسی جہنم میں جل رہے ہیں۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز