پاکستان نے خود کیا اعتراف ، جہاد کے نام پر دہشت گردی پھیلا رہا ہے حافظ سعید

May 14, 2017 04:49 PM IST | Updated on: May 14, 2017 04:49 PM IST

لاہور: پاکستان کے وزارت داخلہ نے عدالتی ریویو بورڈ سے کہا ہے کہ ممبئی حملے کا ماسٹر مائنڈ اور جماعت الدعوۃ کا سرغنہ حافظ سعید اور اس کے چار ساتھیوں کو جہاد کے نام پر دہشت گردی پھیلانے کے لئے حراست میں لیا گیا۔ خیال رہے کہ سعید کل بورڈ کے سامنے پیش ہوا اور اس نے بتایا کہ پاکستان حکومت نے کشمیریوں کی آواز بلند کرنے سے روکنے کے لئے اس حراست میں لیا۔

وزارت داخلہ نے سعید کی دلیلوں کو مسترد کر دیا اور تین رکنی بورڈ سے کہا کہ سعید اور اس کے چار ساتھیوں کو '' جہاد کے نام پر دہشت گردی پھیلانے 'کے لئے حراست میں لیا گیا۔

پاکستان نے خود کیا اعتراف ، جہاد کے نام پر دہشت گردی پھیلا رہا ہے حافظ سعید

بورڈ نے وزارت کو ہدایت دی کہ وہ سعید اور اس کے چار ساتھیوں ظفر اقبال، عبدالرحمان عابد، عبداللہ عبید اور قاضی كاشف نياز کو حراست میں لئے جانے کو لے کر 15 کو ہونے والی اگلی سماعت پر مکمل ریکارڈ سونپے۔ بورڈ نے یہ بھی کہا کہ اگلی سماعت پر پاکستان کے اٹارنی جنرل خود موجود ہوں۔ پولیس نے سخت سیکورٹی کے درمیان حافظ سعید اور اس کے چار ساتھیوں کو بورڈ کے سامنے پیش کیا تھا۔ اس موقع پر سعید کے حامی عدالت کے باہر جمع تھے۔

سعید کے وکیل اے کے ڈوگر بھی موجود تھے، لیکن لشکر طیبہ کے بانی نے عدالت کے سامنے خود ہی اپنی دلیل رکھنے کا فیصلہ کیا۔ سعید نے کہا کہ '' حکومت کی جانب سے میرے خلاف لگائے گئے الزام کسی سرکاری ادارے کی طرف سے کبھی ثابت نہیں ہوئے۔ کشمیر کی آزادی کے لئے آواز بلند کرنے اور مسئلہ کشمیر پر حکومت کی کمزور پالیسی پر تنقید کرنے کی وجہ سے میری تنظیم اور مجھے نشانہ بنایا گیا ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز