مکہ کے ایک ہوٹل میں آتش زدگی: 600 عازمین حج کو بحفاظت نکالا گیا

Aug 21, 2017 05:37 PM IST | Updated on: Aug 21, 2017 05:37 PM IST

جدہ۔ مکہ مکرمہ کے عزیزیہ علاقہ کے ایک ہوٹل میں آتش زدگی کا واقعہ پیش آیا ہے۔ اس ہوٹل میں 600 ترکی اور یمنی عازمین حج قیام پذیر تھے جنہیں سعودی عرب کی ایمرجنسی ریسپانس ٹیم نے بحفاظت باہر نکل لیا ہے۔ سول ڈیفنس کے ترجمان نائف الشریف نے بتایا کہ آتش زدگی میں کسی کے ہلاک ہونے کی اطلاعات نہیں ہیں۔ ترجمان نے کہا کہ مکہ کے العزیزیہ ہوٹل کی 8 ویں منزل پر یہ واقعہ پیش آیا جہاں ایئر کنڈیشن یونٹ میں آگ لگ گئی۔

عرب نیوز ڈاٹ کام کے مطابق، ترجمان نے کہا کہ راحتی ٹیم نے احتیاطی اقدامات کے طور پر ہوٹل میں مقیم تمام مہمانوں کو بحفاظت باہر نکال لیا ہے، ٹیم آگ بجھانے میں کامیاب ہو گئی ہے اور صورت حال کنٹرول میں ہے۔

مکہ کے ایک ہوٹل میں آتش زدگی: 600 عازمین حج کو بحفاظت نکالا گیا

مکہ پولیس اور سول ڈیفنس کی ٹیم کو عزیزیہ علاقہ میں دیکھا جا سکتا ہے۔ فوٹو کریڈٹ، عرب نیوز ڈاٹ کام۔

خیال رہے کہ اسلام کے پانچویں اور اہم رکن حج کی ادائیگی کے لئے ان دنوں دنیا بھر کے لاکھوں مسلمان مکہ میں موجود ہیں۔ ذو الحجہ کے مہینہ میں ہرسال یہاں لاکھوں مسلمان اس اہم مذہبی فریضہ کی ادائیگی کے لئے آتے ہیں۔  حج اسلام کا ایک اہم رکن ہے جو اس مذہب کے ماننے والے ’مسلمانوں‘ پر زندگی میں ایک مرتبہ ادا کرنا فرض ہے، جس کی ادائیگی کے لیے ہر سال دنیا بھر سے مسلمانوں کی بڑی تعداد ذوالحجہ کے مہینے میں مکہ آتی ہے۔

اس سے پہلے گذشتہ ماہ سعودی عرب میں ایک مکان میں ہونے والی آتشزدگی میں 11 مزدور جھلس کر ہلاک ہوگئے تھے۔ وہیں، 2015 میں حج کے دوران مکہ میں جاری ترقیاتی کام کے دوران کرین گرنے کے واقعے میں 717 حاجی جاں بحق ہوگئے تھے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز