میں پرانی شراب کی طرح ہوں : ایم ایس دھونی

Jul 01, 2017 06:05 PM IST | Updated on: Jul 01, 2017 06:36 PM IST

اینٹيگا : ہندوستانی کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان مہندر سنگھ دھونی کی عمر، فارم اور ٹیم میں اہمیت کے سلسلے میں سوالات اٹھتے رہتے ہیں، لیکن وہ کچھ ایسا کرتے ہیں کہ تمام ناقدین کی بولتی بند ہو جاتی ہے اور ویسٹ انڈیز کے خلاف انہوں نے اپنے مین آف دی میچ کارکردگی سے پھر کچھ ایسا ہی کیا ہے۔ وکٹ کیپر بلے باز اور ٹیم کے سب سے تجربہ کار کھلاڑی دھونی نے ویسٹ انڈیز کے خلاف تیسرے ون ڈے میچ میں 79 گیندوں میں ناٹ آؤٹ 78 رن کی نصف سنچری اننگز کھیلی اور ٹیم کے لئے ایک بار پھر میچ فنیشر کے اپنے کردار کو ادا کرتے ہوئے ٹیم کو ویسٹ انڈیز کے خلاف 93 رنز سے جیت دلا ئی اور مین آف دی میچ بھی بنے۔

دھونی اپنے کیریئر کے آخری پڑاؤ پر پہنچ گئے ہیں اور ٹیسٹ میچ کو چھوڑنے کے بعد ومحدود اوور کے فارمیٹ سے بھی کپتانی وراٹ کو سونپ چکے ہیں۔ ان کے سلسلے میں یہ سمجھا جا رہا تھا کہ وہ کرکٹ سے ریٹائرمنٹ کی طرف بڑھ رہے ہیں لیکن دھونی کہہ چکے ہیں کہ وہ اس پڑاؤ پر کھل کر کھیل رہے ہیں۔میچ کے بعد اپنی اس اہم اننگز پر انہوں نے بڑا ہی دلچسپ جواب دیتے ہوئے کہا کہ میں پرانی شراب کی طرح ہوں۔

میں پرانی شراب کی طرح ہوں : ایم ایس دھونی

سابق کپتان کا اشارہ اس طرف تھا کہ جس طرح سے شراب پرانی ہونے کے ساتھ اوربھی بہتر ہو جاتی ہے ویسے ہی بڑھتی ہوئی عمر کے ساتھ ان کا کھیل مزید بہتر ہوا ہے ۔ اس بات سے انہوں نے یہ اشارہ بھی دیا ہے کہ فی الحال محدود اوور کے فارمیٹ میں دھونی کا جلوہ اسی طرح آگے بھی جاری رہے گا۔

واضح رہے کہ کچھ دن پہلے ہی انڈر -19 ٹیم کے کوچ راہل دراوڑ اور سابق کرکٹر اجیت اگرکر نے بھی دھونی اور یوراج کی ٹیم میں موجودگي پر سوال اٹھاتے ہوئے ان کی جگہ پر متبادل تلاش کرنے کی ضرورت پر زور دیا تھا۔ دھونی نے کہا کہ ہمارا ٹاپ آرڈر گزشتہ ایک ڈیڑھ سال سے کافی حیرت انگیز کھیل کا مظاہرہ پیش کررہا ہے اور رن بھی بنا رہا ہے لیکن بہت دیر بعد جاکر مجھے بھی رن بنانے کا موقع مل گیا۔

دھونی نے کہا کہ مجھے لگتا ہے کہ اس وکٹ پر رنز بنانا مشکل تھا اس لئے میری اننگز اہم تھی۔ یہاں پچ پر باؤنس تھی اور شروع میں وکٹ گرنے کے بعد ہمیں شراکت کی ضرورت تھی۔میرے دماغ میں تقریباً 250 کا ہدف تھا اور ہم وہاں تک پہنچ سکے۔ کیدار میرے ساتھ دوسرے سرے پر رن ​​بنا رہے تھے اور یہ ایسا اسکور تھا ،جس کا گیندباز دفاع بھی کر سکتے تھے۔

وکٹ کیپر بلے باز نے پچ پر گیند بازوں کو ہدایات دینے کے بارے میں پوچھنے پر کہا کہ مجھے لگتا ہے کہ اسپنروں کو اس پچ پر ہدایات دینی ضروری تھی۔کلدیپ نے آئی پی ایل میں کافی میچ کھیلے ہیں اور انہوں نے گزشتہ میچ سے بھی اچھی گیندبازی اس میچ میں پیش کی ۔ ہندوستان پانچ میچوں کی ون ڈے سیریز میں تین میچ بعد دو۔صفر کی برتری پر ہے۔پہلا میچ بارش سے متاثر رہا تھا۔ چوتھا ون ڈے بھی اسی پچ پر کھیلا جائے گا۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز