یروشلم معاملہ میں ہندوستان نے امریکہ کے فیصلے کے خلاف ووٹ دیا

نیویارک ۔ اقوامِ متحدہ کی جنرل اسمبلی نے وہ قرارداد منظور کرلی ہے جس میں امریکہ سے کہا گیا ہے کہ وہ مقبوضہ بیت المقدس یا مشرقی یروشلم کو اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم کرنے کا اعلان واپس لے۔

Dec 22, 2017 09:18 AM IST | Updated on: Dec 22, 2017 09:18 AM IST

نیویارک ۔ اقوامِ متحدہ کی جنرل اسمبلی نے وہ قرارداد منظور کرلی ہے جس میں امریکہ سے کہا گیا ہے کہ وہ مقبوضہ بیت المقدس یا مشرقی یروشلم کو اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم کرنے کا اعلان واپس لے۔ قرارداد کے حق میں 128 ممالک نے ووٹ دیئے جن میں ہندستان بھی شامل ہے۔ 35 نے ووٹنگ میں حصہ نہیں لیا جبکہ 9 نے اس قرارداد کی مخالفت کی۔

قرارداد کے متن میں کہا گیا ہے کہ شہر کی حیثیت کے بارے میں فیصلہ ’باطل اور کالعدم‘ ہے اس لیے منسوخ کیا جائے۔

یروشلم معاملہ میں ہندوستان نے امریکہ کے فیصلے کے خلاف ووٹ دیا

مسجد اقصیٰ: فائل فوٹو

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے دھمکی دی تھی کہ مذکورہ قرارداد کے حق میں رائے دینے والوں کی مالی امداد بند کر دی جائے گی۔ مسٹر ٹرمپ نے وہائٹ ہاؤس میں صحافیوں سے کہاتھا کہ ’’وہ ہم سے اربوں ڈالر کی مدد لیتے ہیں اور پھر ہمارے خلاف ووٹ بھی دیتے ہیں۔‘‘

انھوں نے کہا کہ ’’انھیں ہمارے خلاف ووٹ دینے دو ،ہم بڑی بچت کریں گے ،ہمیں اس سے فرق نہیں پڑتا۔‘‘

Loading...

اس سے قبل اقوام متحدہ میں امریکہ کی سفیر نکی ہیلی نے ممبرممالک کو وارننگ دیتے ہوئے کہا تھا کہ اس سلسلہ میں مسٹر ٹرمپ نے ان سے رپورٹ مانگی ہے کہ آج کون کون سے ملک انکے خلاف ووٹ کرنے والے ہیں ۔ ووٹنگ سے پہلے فلسطینی وزیرِ خارجہ نے اقوام متحدہ کے رکن ممالک پر زور دیا تھا کہ وہ دھونس اور دھمکیوں کو خاطر میں نہ لائیں۔

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز