ہند نژاد وراڈكر آئرلینڈ کے پہلے ہم جنس پرست وزیر اعظم منتخب

Jun 03, 2017 01:20 PM IST | Updated on: Jun 03, 2017 01:20 PM IST

ڈبلن۔  آئر لینڈ میں ہند نژاد لیو وراڈكر کو حکمراں اتحاد کی سب سے بڑی پارٹی فائن گیل کا لیڈر منتخب کیا گیا ہے اور اب وہ ملک کے پہلے ہم جنس پرست وزیر اعظم ہوں گے۔ 38 سالہ لیو وراڈكر نے اپنے مخالف اور ہاؤسنگ منسٹر سائمن كوویني کو 60 فیصد ووٹوں سے شکست دی ہے اور اب وہ آئرلینڈ کے اب تک کے سب سے نوجوان اور اولین ہم جنس پرست وزیر اعظم بھی ہوں گے۔ انہوں نے ملک کے حکمراں اتحاد کی سب سے بڑی پارٹی کی قیادت کا انتخاب جیت لیا ہے اور وہ اگلے چند ہفتے میں ملک کے وزیر اعظم بن جائیں گے۔ وراڈكر نے اپنی اس شاندار فتح کے بعد کہا کہ "میرےانتخابی نتائج ہی سب کچھ بیان کر رہے ہیں۔ مجھے پتہ ہے کہ میرے والد پانچ ہزار كلوميٹر دور چل کر آئر لینڈ میں ایک نئے گھر بنانے کا خواب دیکھےتھے۔ مجھے لگتا ہے کہ انہوں نے کبھی یہ نہیں سوچا تھا کہ ایک دن ان کا بیٹا اس ملک کا وزیر اعظم ہو گا۔

آج ملک میں ہر والدین کو اپنے بچے کے اوپر فخر ہونا چاہئے"۔ 18 جنوری 1979 کو ڈبلن میں پیدا هونے والے وراڈكر کے والد اشوک ممبئی سے آئرلینڈ پہنچنے والے ایک ڈاکٹر تھے جنہوں نے آئرش نژاد نرس ​​مریم سے شادی کی تھی۔ ان دونوں کی ملاقات انگلینڈ بركشر میں ساتھ کام کرتے ہوئے ہوئی تھی اور بعد میں وہ دونوں 70 کی دہائی میں آئر لینڈ میں بس گئے تھے۔ وراڈكر نے اپنی انتخابی مہم کو سماجی اور اقتصادی مسائل پر مرکوز رکھا۔ وزیر اعظم بننے کے بعد اب ان کے سامنے آئر لینڈ کی معیشت کو پٹری پر لانا اور بریگزٹ کے بعد کے حالات سے نمٹنے جیسے چیلنج ہوں گے۔

ہند نژاد وراڈكر آئرلینڈ کے پہلے ہم جنس پرست وزیر اعظم منتخب

رائٹرز

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز