عالمی دہشت گرد قرار دئے جانے پر بوکھلایا صلاح الدین ، فیصلہ کو بتایا احمقانہ ، مسلح جد و جہد جاری رکھنے کا اعلان

Jul 02, 2017 09:56 AM IST | Updated on: Jul 02, 2017 10:59 AM IST

مظفر آباد : دہشت گرد تنظیم حزب المجاہدین کے سرغنہ سید صلاح الدین نے امریکہ کی جانب سے اسے عالمی دہشت گرد قرار دینے جانے کی پرواہ نہ کرتے ہوئے آج کہاکہ وہ جموں و کشمیر میں اپنی مسلح جدوجہد جاری رکھے گا۔  امریکی محکمہ خارجہ کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا تھا کہ ’سید صلاح الدین کو ایگزیکٹو آرڈر 13224 کے سیکشن ’ون بی‘ کے تحت عالمی دہشت گرد قرار دیا جاتا ہے، جو امریکا اور اس کے شہریوں کی سلامتی کے لیے خطرہ بننے والے غیر ملکیوں پر لاگو ہوتا ہے جبکہ اس کے بعد پابندی کی زد میں آنے والے پر پابندیاں بھی عائد ہوجاتی ہیں۔‘

پابندی کے بعد کسی امریکی کو سید صلاح الدین سے مالی لین دین کی اجازت نہیں ہوگی۔  امریکی وزارت خارجہ کے مطابق ستمبر 2016 میں صلاح الدین نے دھمکی دے کر کہا تھا کہ وہ زیادہ سے زیادہ کشمیری خودکش حملہ آوروں کو تربیت دے کر وادی کو ہندستانی فوج کے قبرستان کے طور پر تبدیل کردے گا۔

عالمی دہشت گرد قرار دئے جانے پر بوکھلایا صلاح الدین ، فیصلہ کو بتایا احمقانہ ، مسلح جد و جہد جاری رکھنے کا اعلان

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز