Hajj 2018 qatar and saudi arabia hajj pilgrims حج 2018 : قطر نے عازمین حج کو روکنے کا الزام لگایا ، سعودی عرب نے کی تردید – News18 Urdu

حج 2018 : قطر نے عازمین حج کو روکنے کا الزام لگایا ، سعودی عرب نے کی تردید

قطر نے سعودی عرب پر اس سال کے حج میں اس کے شہریوں کو شامل نہیں کرنے کا الزام لگایا ہے جبکہ سعودی عرب کے حکام نے ان الزامات کو غلط قرار دیا ہے ۔

Aug 19, 2018 04:31 PM IST | Updated on: Aug 19, 2018 04:31 PM IST

قطر نے سعودی عرب پر اس سال کے حج میں اس کے شہریوں کو شامل نہیں کرنے کا الزام لگایا ہے جبکہ سعودی عرب کے حکام نے ان الزامات کو غلط قرار دیتے ہوئے کہاکہ سفارتی تنازع کی وجہ سے اس کے شہریوں کو مکہ کا سفر کرنے سے نہیں روکا جارہا ہے۔ اس بارکوٹہ نظام کے تحت قطر کے 1200 شہری حج کاسفر کرنے کے اہل ہیں لیکن قطر کا کہنا ہے کہ ان کے لئے پرمٹ حاصل کرنا ناممکن ہوچکا ہے۔ یہ سب سعودی عرب ، متحدہ عرب امارات، بحرین اور مصر کے تجارتی اور سفارتی تعلقات میں کٹوتی کی مہم وجہ سے ہورہا ہے۔

قطر انسانی حقوق کمیٹی کے عبداللہ الکابی نے کہاکہ سعودی عرب نے اس الیکٹرانک نظام کو بند کردیا تھا، جس کے سہارے قطر سے جانے والے مسافروں کے لئے ٹریول ایجنسیاں پرمٹ حاصل کیا کرتی تھیں۔ انہوں نے کہاکہ اس برس قطر کے شہریوں کے لئے حج کرنے کا کوئی موقع نہیں ہے۔ قطر سے حاجیوں کا رجسٹریشن بند ہوچکا ہے اور قطر کے شہریوں کو ویزا نہیں دیا جاسکتا کیونکہ وہاں کوئی سفارتی مشن نہیں ہے۔

حج 2018 : قطر نے عازمین حج کو روکنے کا الزام لگایا ، سعودی عرب نے کی تردید

خانہ کعبہ ۔ فائل فوٹو

ادھر ایک سعودی افسر نے کہاکہ قطر نے اپنے مسافروں کے لئے قائم کئی رجسٹریشن لنکوں کو بند کردیا ہے۔ سعودی عرب حج وزارت کے ایک افسر نے کہاکہ اتوار سے 24اگست تک چلنے والے حج سفر کے لئے قطر کے شہریوں کا ایک گروپ پہنچا تھا لیکن انہوں نے یہ نہیں بتایا کہ یہ کتنے لوگ تھے یا کیا وہ سیدھے قطر سے سفر کررہے تھے ۔ گزشتہ برس 1,624قطر کے شہریوں نے حج کیا تھا۔

Loading...

Loading...