پاکستانی سپریم کورٹ کا فیصلہ: نواز شریف زندگی بھر رہیں گے سیاست سے دور– News18 Urdu

پاکستانی سپریم کورٹ کا فیصلہ: نواز شریف زندگی بھر رہیں گے سیاست سے دور

اسلام آباد۔ پاکستان کی سپریم کورٹ نے سابق وزیر اعظم نواز شریف کو تاحیات نااہل قرار دے دیا ہے۔

Apr 13, 2018 01:06 PM IST | Updated on: Apr 13, 2018 01:22 PM IST

اسلام آباد۔ پاکستان کی سپریم کورٹ نے آرٹیکل 62 (1) (ایف) کے تحت نااہلی کی مدت کی تشریح کیس کا فیصلہ سناتے ہوئے سابق وزیر اعظم اور پاکستان مسلم لیگ (ن) کے قائد نواز شریف اور پاکستان تحریک انصاف کے سابق جنرل سکریٹری جہانگیر ترین کی نااہلی کی مدت کو تاحیات قرار دے دیا۔ چیف جسٹس میاں ثاقب نثار کی سربراہی میں جسٹس شیخ عظمت سعید، جسٹس عمر عطا بندیال، جسٹس اعجاز الاحسن اور جسٹس سجاد علی شاہ پر مشتمل 5 رکنی لارجر بنچ نے آرٹیکل 62 (1) (ایف) کے تحت نااہلی کی مدت کی تشریح کے لیے 13 درخواستوں کی سماعت کی۔

عدالت میں جسٹس عمر عطا بندیال نے فیصلہ سناتے ہوئے کہا کہ آئین کے آرٹیکل 62 ون ایف کے تحت نااہل قرار دئیے گئے شخص کی نااہلی کی مدت تاحیات ہوگی اور وہ شخص عام انتخابات میں حصہ نہیں لے سکے گا۔ اپنے فیصلے میں عدالت نے کہا کہ عوام کو اچھے اخلاق کے حامل لیڈران کی ضرورت ہے اور جب تک عدالتی ڈیکلریشن موجود ہے، نااہلی رہے گی۔

پاکستانی سپریم کورٹ کا فیصلہ: نواز شریف زندگی بھر رہیں گے سیاست سے دور

پاکستان کے سابق وزیر اعظم نواز شریف کی فائل فوٹو: فوٹو، رائٹرز۔

واضح رہے کہ عدالت کی جانب سے پانچوں ججز کے اس متفقہ فیصلے کو جسٹس عمر عطا بندیال نے تحریر کیا جبکہ جسٹس عظمت سعید شیخ نے اضافی نوٹ تحریر کیا۔ خیال رہے کہ 14 فروری 2018 کو سپریم کورٹ نے اٹارنی جنرل اشتر اوصاف کے دلائل مکمل ہونے کے بعد آرٹیکل 62 (1) (ایف) کے تحت نااہلی کی مدت کی تشریح کیس کا فیصلہ محفوظ کیا تھا۔

Loading...

Loading...