اب ایران کے سپریم لیڈر آیت اللہ علی خامنہ ای کے نمائندہ کا داعش سربراہ ابو بکر بغدادی کی موت کادعوی

Jun 30, 2017 09:32 AM IST | Updated on: Jun 30, 2017 10:16 AM IST

انقرہ : ایران کے اعلی لیڈر آیت اللہ علی خامنہ ای کے ایک نمائندے نے آج دعوی کیا کہ دہشت گرد تنظیم اسلامک اسٹیٹ کا لیڈر ابو بکر البغدادی کی یقینی طور پر موت ہوگئی ہے۔ ایران کی سرکاری نیوز ایجنسی ارنا نے قدس فورس کے نمائندے مولوی علی شیرازي کے حوالے سے کہا ’’دہشت گرد بغدادی یقینی طور پر مر چکا ہے‘‘۔

تاہم انہوں نے اس بارے میں تفصیل سےمزید کچھ نہیں بتایا۔ آئی ایس کے جنگجوؤں کے شمالی عراق کے بڑے حصے پر قبضے کے بعد 2014 میں موصل میں ایک مسجد سے سبھی مسلمانوں پر حکومت کرنے کے لئے بغدادی کو خلیفہ مقرر کیا گیا تھا۔ اس کے بعد سے اکثر اس کے مارے جانے یا زخمی ہونے کی خبریں آتی رہتی ہیں۔

اب ایران کے سپریم لیڈر آیت اللہ علی خامنہ ای کے نمائندہ کا داعش سربراہ ابو بکر بغدادی کی موت کادعوی

اگرچہ ایرانی وزارت خارجہ کے افسران بغدادی کی موت کی رپورٹ پر تبصرہ کرنے کے لئے دستیاب نہیں تھے۔ روس نے 17 جون کو امکان ظاہر کی تھی کہ شام میں اس کے فضائی حملے میں بغدادی مارا گیا تھا۔ امریکہ نے آج کہا کہ ایسی رپورٹوں کی تصدیق کرنے کا اسے کوئی علم نہیں ہے۔ عراقی حکام نے بھی حالیہ ہفتوں میں بغدادی کے مارے جانے کے شبہ کا اظہار کیا تھا۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز