شام میں روس اور امریکہ کے مابین جنگ بندی کےمعاہدے کو پورے ملک میں نافذ کیا جائے: ایران

Jul 10, 2017 05:49 PM IST | Updated on: Jul 10, 2017 05:51 PM IST

لندن: ایرن کی وزارت خارجہ کے ترجمان نے آج کہا کہ جنوب مغربی شام میں امریکہ ،روس اور اردن کے درمیان جزوی جنگ بندی کے معاہدہ کو اگر کامیاب بنانا ہے تو اسے پورے ملک میں نافذ کیا جائے۔ جمعہ کے روز امریکہ ، روس اور اردن نے جنوب مغربی علاقے میں جنگ بندی کا اعلان کیا تھا، جو ہیمبرگ میں جی-20 کے اجلاس میں امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ اور روسی صدر ولادیمر پوتن کی ملاقات کے بعد اتوار سے نافذ ہوگيا ہے۔

تسنیم نیوز ایجنسی نے ایرانی وزارت خارجہ کے ترجمان بہرام قاسمی کے حوالے سے بتایا کہ ہم نے آستانہ مذاکرات میں جن علاقوں پر بات چیت کی ہے ان تمام علاقوں کے ساتھ پورے ملک میں اگر جنگ بندی کے معاہدے کو نافذ کیاجا ئے ، تبھی یہ بار آور ثابت ہوسکتا ہے۔ آستانہ مذاکرات میں ایران، روس اور ترکی نے شام میں چار غیر عسکری خطے تشکیل دینے کی کوشش کی تھی، تاہم، اس پر اتفاق رائے نہیں ہوسکا تھا۔

شام میں روس اور امریکہ کے مابین جنگ بندی کےمعاہدے کو پورے ملک میں نافذ کیا جائے: ایران

ایرانی ترجمان نے کہا کہ ایران شام کے اقتدار اور سلامتی کا خواستگار ہے، اسلئے جنگ بندی کا معاہدہ کسی خاص علاقے تک محدود نہيں کیاجاسکتا اور کوئي بھی جنگ بندی کا معاہدہ زمینی حقائق کو زیر غور لائے بغیر کامیاب نہيں ہوسکتا ۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز