کہانی اس لڑکی کی جو ماڈل تھی، مارڈن کپڑے پہنتی تھی اس لئے اس کا قتل کر ڈالا

ماڈل ہونے کے ناطے تارہ مارڈن کپڑے پہنا کرتی تھی او اس کی زندگی بھی کچھ الگ تھی جس سے کئی دقیانوسی عراقی لوگ ناراض تھے۔

Oct 03, 2018 08:58 AM IST | Updated on: Oct 03, 2018 01:35 PM IST

ایک ماڈل کا قتل اس لئے کر دیا جاتا ہے کیونکہ سماج کا ایک طبقہ اس کی زندگی جینے کا طریقہ برداشت نہیں کر پاتا۔ وہ عراق کی راجدھانی بغداد کی تھی لیکن اربیل کو زیادہ محفوظ سمجھ کر وہ وہاں چلی گئی تھی۔ اسے مسلسل دھمکیاں مل رہی تھیں۔ وہ ساتھیوں سے ملنے  اکثر بغداد آیا کرتی تھی۔ گزشتہ 27 ستمبر کو اسے بغداد آنا مہنگا پڑا کیونکہ یہاں قاتل اس کا انتظار کر رہے تھے۔

کچھ ہی روز پہلے تارہ کو عراق کے ان سوشل میڈیا اسٹاروں کی فہرست میں ٹاپ 10 میں شامل کیا گیا تھا جن کے سب سے زیادہ فالوورس ہیں۔ تارہ کو کہاں پتہ تھا کہ انسٹاگرام پر قریب تیس لاکھ کی فین فالوونگ ہونے کے باوجود عراقی سماج کا ایک بڑا طبقہ اسے کتنی نفرت سے دیکھتا تھا۔ ماڈل ہونے کے ناطے تارہ مارڈن کپڑے پہنا کرتی تھی او اس کی زندگی بھی کچھ الگ تھی جس سے کئی دقیانوسی عراقی لوگ ناراض تھے۔

کہانی اس  لڑکی کی جو ماڈل تھی، مارڈن کپڑے پہنتی تھی اس لئے اس کا قتل کر ڈالا

Loading...

بغداد کی ہی رہنے والی تارہ تین سال پہلے کردستان کے ایربل شہر میں رہنے چلی گئی تھی کیونکہ بغداد میں اسے خطرہ محسوس ہونے لگا تھا۔ اپنے کنبے کے ساتھ رہنے والی تارہ اپنے گھر والوں کے مستقبل کیلئے بہت کچھ پلان کر رہی تھی۔ وہ ایک گھر خریدنا چاہتی تھی اور اس طرح جینا چاہتی تھی جیسے باقی دنیا میں لوگ جیتے ہیں لیکن اس کی زندگی میں ایسا موڑ لکھا تھا جس کے بارے میں کسی کو کچھ نہیں پتہ تھا۔

تارہ کا اکثر بغداد آناجانا لگا رہتا تھا اس بار بھی تارہ اپنے ماڈلنگ کے سلسلے میں دوستوں سے ملنے یہاں آئی تھی ۔ بتا دیں کہ گزشتہ 27 ستمبر کو وہ سینٹرل بغداد کے کیمپ سارا علاقے میں اپنی سفید رنگ کی کنورٹبل کار میں تھی۔ تبھی دن دہاڑے کچھ لوگ وہاں پہنچے اور 22 سال کی تارہ کو تین گولیاں مارکر موت کے گھاٹ اتار دیا۔

تارہ فیئرس کی موت کے بعد عراقی سماج کی اس حرکت کو لیکر ایک بحث چھڑ گئی ہے اور اعلی لیڈران بھی اسے افسوسناک واقعہ قرار دے رہے ہیں۔ وہیں تارہ کے دوست رہے فوٹو گرافر اومر کا کہنا ہے کہ تارہ کو دھمکیاں ملتی رہتی تھیں کہ اس نے اپنے جینے اور رہن سہن کا طریقہ نہیں بدلا تو اچھا نہیں ہوگا لیکن تارہ نے دھمکیوں کی پرواہ نہیں کی اور اسے لگتا رہا کہ یہ جھوٹی دھمکیاں ہیں۔ اومر کا کہنا ہے کہ تارہ کی موت کے بعد اس کے اور دوست بھی جان کو لیکر ڈرے ہوئے ہیں۔

یہاں دیکھیں تارہ کی تصویریں

tara4

tara1

tara5

tara3

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز