عراقی سلامتی دستوں نے موصل کی بڑی سرکاری عمارت پر قبضہ کیا

Mar 07, 2017 01:23 PM IST | Updated on: Mar 07, 2017 01:23 PM IST

بغڈاد۔  عراق کے سلامتی دستوں نے آج موصل کی خاص سرکاری عمارت سے داعش (آئی ایس) کے جنگجووں کو باہر نکال دیا ۔ عراق میں یہ شہر ان کا آخری بڑا گڑھ ہے۔ وزارت داخلہ کے ترجمان لیفٹننٹ کرنل عبدالامیر المحمد دعوی نے رائٹر کو بتایا کہ رات کی کارروائی میں جنوبی سریع الحرکت دستہ نینوہ گورنیٹ عمارت اور آس پاس کی سرکاری عمارتوں میں گھس گیا۔ انہوں نے بتایا ’’اس دستہ نے داعش کے بیسیوں لڑاکووں کو مارڈالا۔‘‘

اس جگہ دوبارہ قبضہ کرنے سے عراقی فورسز کو قریبی قدیمی شہر مرکز میں جنگجوؤں پر حملہ کرنے میں مدد ملے گی۔ حالانکہ یہ عمارتیں تباہ کردی گئی تھیں اور داعش انہیں استعمال نہیں کررہا تھا مگر یہ موصل پر سرکاری اتھارٹی قائم ہونے کا ایک علامتی قدم ہے۔

عراقی سلامتی دستوں نے موصل کی بڑی سرکاری عمارت پر قبضہ کیا

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز