شام میں داعش کا بڑا حملہ، بڑی تعداد میں سرکاری فوجیوں اور شہریوں کی موت

Jan 15, 2017 10:16 AM IST | Updated on: Jan 15, 2017 10:16 AM IST

بیروت۔  اسلامک اسٹیٹ (داعش) کے دہشت گردوں نے شام میں حکومت کے مقبوضہ دیر الزور شہر میں کل رواں مہینے کا سب سے بڑا حملہ کیا جس میں بڑی تعداد میں عام شہری اور سرکاری فوجی مارے گئے۔ شامی حقوق انسانی کی نگراں تنظیم نے بتایا کہ شہر میں کل سویرے سے اب تک کم از کم چھ دھماکوں کی آوازیں سنائی دیں۔ سرکاری جنگی طیاروں نے جوابی کارروائی کرتے ہوئے داعش کے ٹھکانوں پر حملے کئے۔ دو طرفہ حملوں میں بڑی تعداد میں لوگ مارے گئے۔

سرکاری ٹیلی ویژن نے بتایا کہ داعش کی گولہ باری سے تین افراد ہلاک اور نو دیگر زخمی ہو گئے۔ عراق کی سرحد سے متصل دیر الزور صوبہ کے زیادہ تر حصوں پر داعش کا قبضہ ہے اور انہوں نے تقریبا دو سال سے حکومت کے کنٹرول والے حصے کو چاروں طرف سے گھیر رکھا ہے۔ شامی حکومت اور روسی اتحادی جنگ زدہ علاقے میں مسلسل مدد پہنچا رہے ہیں جہاں تقریبا دو لاکھ لوگ رہتے ہیں۔ اس علاقے کے لوگوں کو اشیاء خورد و نوش اور ادویات کے لئے بھی محتاج ہونا پڑ رہا ہے۔

شام میں داعش کا بڑا حملہ، بڑی تعداد میں سرکاری فوجیوں اور شہریوں کی موت

علامتی تصویر: تصویر ٹوئٹر

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز