موصل : عراقی فورسز نے شمالی شہر موصل میں داعش کے وزیر صنعت اور اس کے معاون کو گرفتار کر لیا ہے اور داعش کے دہشت گردوں  کو شکست سے دوچار کرنے کے بعد مزید علاقوں پر قبضہ کر لیا ہے۔ العربیہ نیوز کی خبر کے مطابق عراقی فورسز کے لیفٹیننٹ جنرل عبدالامیر رشید یاراللہ نے مغربی موصل کے ایک علاقے شیخ محمد شرق بادوش کو داعش کے پنجے سے آزاد کرانے کا اعلان کیا ہے اور کہا ہے کہ وہاں عراق کا پرچم لہرا دیا گیا ہے۔

موصل : دہشت گرد تنظیم داعش کا وزیر صنعت گرفتار، عراقی فورسز کا مزید علاقوں پر قبضہ

فائل فوٹو

انھوں نے بتایا ہے کہ داعش کے وزیر صنعت کو بادوش ہی سے گرفتار کیا گیا ہے۔البتہ انھوں نے اس وزیر کے بارے میں مزید تفصیل نہیں بتائی ہے اور صرف یہ کہا ہے کہ وہ عراقی ہے۔ عراق کی وفاقی پولیس کی سریع الحرکت فورس کے ایک کمانڈر رائد شاكر جودت نے کہا ہے کہ مغربی موصل کے نوّے فی صد قدیم حصے کو داعش سے آزاد کرا لیا گیا ہے اور ان کی فورس دریائے دجلہ کے قدیم پُل سے صرف ایک سو میٹر کی دوری پر ہے۔

انھوں نے بتایا ہے کہ وفاقی پولیس نے موصل کے قدیم حصے میں واقع علاقے الباب الجدید کو بھی آزاد کرا لیا ہے اور وہ باب البیض کی جانب پیش قدمی کررہی ہے۔ انھوں نے کہا کہ فوج کے یونٹوں نے شہریوں کے تحفظ کے پیش نظر اب سست رفتار فتح کی حکمتِ عملی اختیار کر لی ہے کیونکہ مغربی موصل کے گنجان آباد وسطی علاقے میں داعش لوگوں کو انسانی ڈھال کے طور پر استعمال کررہے ہیں اور ان شہریوں کی جانیں بچانے کے لیے احتیاط سے پیش قدمی کی جارہی ہے۔