یروشلم معاملہ: یو این قرارداد سے خفا اسرائیل کا یونیسکو کی رکنیت چھوڑنے کا اعلان

پیرس۔ اسرائیل نے اقوام متحدہ کے ثقافتی اور تعلیمی ادارے (یونیسکو) کو باضابطہ طور پر یہ مطلع کر دیا ہے کہ وہ 31 دسمبر 2018 سے اس ادارے کا رکن نہیں رہے گا۔

Dec 30, 2017 01:19 PM IST | Updated on: Dec 30, 2017 01:19 PM IST

پیرس۔ اسرائیل نے اقوام متحدہ کے ثقافتی اور تعلیمی ادارے (یونیسکو) کو باضابطہ طور پر یہ مطلع کر دیا ہے کہ وہ 31 دسمبر 2018 سے اس ادارے کا رکن نہیں رہے گا۔ اسرائیل نے پہلے ہی یہ اعلان کر دیا تھا کہ وہ یہودی ملک کی تنقید کرنے والی قراردادوں پر امریکہ کی جانب سے یونیسکو کی رکنیت چھوڑنے کی تقلید کرے گا۔

یونیسکو کے سربراہ آندرے اجولے نے اس بات کی وضاحت کرتے ہوئے کہا کہ انہیں جمعہ کو باضابطہ طور پر بتایا گیا کہ اسرائیل 31 دسمبر 2018 کو یونیسکو کی رکنیت چھوڑ دے گا۔

یروشلم معاملہ: یو این قرارداد سے خفا اسرائیل کا یونیسکو کی رکنیت چھوڑنے کا اعلان

اسرائیل کے وزیر اعظم بنجامن نیتن یاہو: فائل فوٹو، رائٹرز۔

Loading...

واضح رہے کہ امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ کی جانب سےیروشلم کو اسرائیل کی راجدھانی کے طور پر تسلیم کئے جانے کے فیصلے کے خلاف اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کی ایک قرارداد میں 21 دسمبر کو ووٹنگ ہوئی تھی جس میں ہندوستان سمیت 100 سے زائد ممالک نے امریکہ سے اس فیصلے کو واپس لینے کی اپیل کی تھی۔

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز