اٹلی نے سائبر دھمکی کے خلاف قانون پاس کیا

May 18, 2017 02:01 PM IST | Updated on: May 18, 2017 02:01 PM IST

روم۔  اٹلی کی پارلیمنٹ نے ایک بڑا قدم اٹھاتے ہوئے کل سائبر جرائم کے خلاف طویل مدتی انتظار والے قانون کو اپنی منظوری دے دی ہے۔ یہ مجرموں کی آن لائن غنڈہ گردی سے نمٹنے کی سمت میں کارگر ثابت ہوگا۔ پچھلے کچھ عرصے سے سائبر جرائم میں بے تحاشہ اضافہ ہوا ہے اور کئی ہائی پروفائل معاملے میں جن میں سے کچھ لوگوں نے خود کشی تک کر لی، ان سب سے نمٹنے میں اس قانون سے مدد ملے گی۔

اس قانون کے سلسلے میں  پارلیمنٹ میں زبرست اتحاد کا مظاہرہ کرتے ہوئے ممبران پارلیمنٹ نے اس کے حق میں 432 ووٹ ڈالتے ہوئے اسے منظوری دی۔ چیمبر اسپیکر لورا بولڈريني نے ووٹنگ کے بعد کہا، ’’ہم اس قانون کو کیرولینا اور ان تمام لوگوں کے لئے وقف کرتے ہیں جو سائبر دھمکی کا شکار ہوئے ہیں‘‘۔ کیرولینا نے جنسی تشدد سے متعلق ویڈیوز کے لوگوں کے درمیان پھیلنے کے بعد تیسرے فلور سے کود کر اپنی جان دے دی تھی۔ اس قانون کے ذریعے اٹلی میں پہلی بار سائبر دھمکی کی وضاحت کی گئی ہے اور اس بات پر زور دیا گیا ہے کہ تمام اسکولوں میں بچوں کو انٹرنیٹ کے استعمال کے تئیں ذمہ داری کے بارے میں تعلیم یافتہ کیا جانا چاہیے۔ یہ قانون کسی کی بدنامی، دھمکی یا نابالغ کی شناخت چوری کرنے کے لئے انٹرنیٹ کا استعمال کرنے کو غیر قانونی بناتا ہے ۔

اٹلی نے سائبر دھمکی کے خلاف قانون پاس کیا

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز