یروشلم کو اسرائیل کی راجدھانی تسلیم کرنے کے ٹرمپ کے فیصلہ کی دنیا کے کسی بھی ملک نے نہیں کی حمایت

Dec 08, 2017 01:22 PM IST | Updated on: Dec 08, 2017 01:22 PM IST

واشنگٹن : امریکہ کا کہنا ہے کہ صدر ڈونالڈ ٹرمپ کی جانب سے یروشلم کو اسرائیل کی راجدھانی کے طور پر منظوری دیئے جانے کے بعد دنیا کے کسی بھی ملک کے بارے میں ایسی کوئی اطلاع نہیں ہے جس سے معلوم ہوسکے کہ وہ ان کے اس قدم سے ان کے ساتھ ہیں۔ امریکی صدر دفتر وائٹ ہاؤس کی ترجمان سارا سینڈرس نے نامہ نگاروں کو بتایا کہ فی الحال اس بارے میں کوئی جانکاری نہیں ہے کہ کتنے ممالک یروشلم کو اسرائیل کی راجدھانی کے طور پر منظوری دیئے جانے کا منصوبہ بنارہے ہیں۔

واضح رہے کہ دنیا کے کئی ممالک یروشلم کو اسرائیل کی راجدھانی کے طور پر منظور ی دیئے جانے کے مسٹر ٹرمپ کے فیصلے کی مذمت کررہے ہیں۔ اقوام متحدہ کے جنرل سکریٹری اینٹنو گوٹریس نے کہا کہ مسٹر ٹرمپ کا بیان اسرائکل اور فلسطین کے درمیان امن کے امکانات کو برباد کردے گا۔ فرانسیسی صدر ایمنوئیل میکرو نے کہا ہے کہ ٹرمپ کا فیصلہ افسوسنا ک ہے۔ چین اور مصر نے بھی تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ اس سے علاقے میں بدامنی پھیلے گی۔

یروشلم کو اسرائیل کی راجدھانی تسلیم کرنے کے ٹرمپ کے فیصلہ کی دنیا کے کسی بھی ملک نے نہیں کی حمایت

برطانیہ کی وزیراعظم تھیریسامے نے کہا کہ یروشلم کی صورتحال کو ایک مشترکہ راجدھانی کی شکل میں طے کیا جانا چاہئے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز