یروشلم تنازع سے متعلق قرارداد پر سلامتی کونسل میں ووٹنگ سے عین قبل سی آئی اے ڈائریکٹر کی شاہ سلمان سے ملاقات ، چھڑی بحث

یروشلم کے معاملہ پر امریکہ اور عرب ممالک کے مابین کشیدگی کے درمیان سعودی عرب کے فرمانروا شاہ سلمان بن عبدالعزیز نے امریکی کی سنٹرل انٹیلی جنس ایجنسی( سی آئی اے) کے ڈائریکٹر مائیک پومپیو نے ملاقات کی ہے ۔

Dec 18, 2017 10:24 PM IST | Updated on: Dec 18, 2017 10:27 PM IST

ریاض : یروشلم کے معاملہ پر امریکہ اور عرب ممالک کے مابین کشیدگی کے درمیان سعودی عرب کے فرمانروا شاہ سلمان بن عبدالعزیز نے امریکی کی سنٹرل انٹیلی جنس ایجنسی( سی آئی اے) کے ڈائریکٹر مائیک پومپیو سے ملاقات کی ہے ۔ اس ملاقات کے بعد ایک مرتبہ پھر چہ می گوئیاں شروع ہوگئی ہیں اور ناقدین نے سعودی شاہ کو نشانہ بنانا شروع کردیا ہے ۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق ملاقات کے دوران دونوں ممالک کے درمیان دوطرفہ تعلقات اور خطے میں رونما ہونے والی تازہ پیش رفت کے حوالے سے تبادلہ خیال کیا ہے۔بتایا جاتا ہے کہ ملاقات میں امریکہ میں سعودی عرب کے سفیر شہزادہ خالد بن سلمان ، وزیر خارجہ عادل الجبیر ، سعودی وزیر مملکت اور شاہی دیوان کے سربراہ خالد بن عبدالرحمان العیسیٰ اور سعودی انٹیلی جنس ایجنسی کے سربراہ خالد بن علی الحمیدان بھی موجود تھے۔

یروشلم تنازع سے متعلق قرارداد پر سلامتی کونسل میں ووٹنگ سے عین قبل سی آئی اے ڈائریکٹر کی شاہ سلمان سے ملاقات ، چھڑی بحث

امریکی سی آئی اے کے سربراہ مائیک پومپیو نےسعودی عرب کے فرما ں روا شاہ سلمان بن عبدالعزیز سے الیمامہ محل میں ملاقات کی ہے ۔

سعودی فرمانرو اور سی ای آئی ڈائریکٹر کی ملاقات اس وجہ سے موضوع بحث بن گئی ہے کیونکہ پیر کو ہی امریکی صدر کے یروشلم کو اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم کرنے کے متنازع فیصلے کے خلاف مصر کی طرف سے پیش کردہ قرارداد پر اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں رائے شماری ہونے والی ہے ۔

علاوہ ازیں چند روز قبل ہی ہونے والی اوآئی سی کی میٹنگ میں سعودی عرب کے سربراہ کی عدم شرکت پر تشویش کا اظہار کیا جارہا تھا اور کہا جارہا تھا کہ ایک طرف تو سعودی عرب فلسطینی کاز کی مکمل حمایت اور مظلوم فلسطینیوں کے ساتھ شانہ بشانہ کھڑا ہونے کا دعوی کرتا ہے ، مگر جب کسی بڑے پلیٹ فارم پر جمع ہو کر کھل کر اس کی حمایت میں آواز بلند کرنے کا وقت آتا ہے تو وہ پیچھے ہٹ جاتا ہے ۔

Loading...

غور طلب ہے کہ 57 مسلم ممالک کی اس تنظیم کے اجلاس میں میزبان ترکی کے علاوہ 50 ممالک کے مندوبین شریک ہوئے۔ 22 ممالک کے صدور اور وزرائے اعظم نے بھی اس اجلاس میں شرکت کی۔ تاہم سعودی عرب، متحدہ عرب امارات اور مصر کے سربراہان اس اہم اجلاس میں شریک نہیں ہوئے اور ان کی نمائندگی وہاں کے وزیروں نے کی۔جبکہ لاطینی امریکہ کے ملک وینزویلا کے صدر نکولاس ادورو نے غیر متوقع طور پر شرکت کرکے سب کو حیران کردیا ۔

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز