جنید کے قاتل کو پھانسی کی سزا سے کم نہیں ملنی چاہئے، والد جلال الدین کا مطالبہ

Jul 30, 2017 04:47 PM IST | Updated on: Jul 30, 2017 04:47 PM IST

نئی دہلی: جنیدکے قاتلوں کو پھانسی کی سزا دینے کا حکومت سے مطالبہ کرتے ہوئے جنید کے والد جلال الدین نے کہاکہ اس طرح کسی بھی انسان کے ساتھ نہیں ہونا چاہئے خواہ وہ ہندو ہو یا مسلمان، سکھ ہو یا عیسائی یا کوئی اور۔ انہوں نے حکومت سے اس سلسلے میں سخت قدم اٹھانے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہاکہ اس طرح کے واقعات سے جہاں ایک خاص کمیونٹی میں دہشت پھیل رہی ہے وہیں ملک کا نام بھی بدنام ہورہا ہے۔ اس لئے اس کا سدباب صرف ایک کمیونٹی کے حق میں ہی نہیں ملک کے مفاد میں بھی ضروری ہے۔

انہوں نے کہاکہ میں وہ نہیں چاہتے اس طرح کے درد سے کوئی اور بھی دوچار ہو جس طرح کی تکلیف سے انہیں دوچار ہونا پڑا ہے۔ انہوں نے امید ظاہر کی کہ انہیں انصاف ضرور ملے گا اور یہاں کی عدالت پر انہیں پورا بھروسہ ہے۔انہوں نے پولیس کی پیش رفت پر اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے کہاکہ پولیس کا رویہ ہمارے ساتھ منصفانہ ہے اور کیس کی تحقیقات صحیح سمت میں چل رہی ہے۔

جنید کے قاتل کو پھانسی کی سزا سے کم نہیں ملنی چاہئے، والد جلال الدین کا مطالبہ

file photo

مسلم تنظیموں کی طرف سے مدد کے بارے میں پوچھے گئے سوال کے جواب انہوں نے کہاکہ جمعیۃعلمائے ہند نے مدد کی ہے اور وکیل کا بھی انتظام کروایا ہے مگر اس مقدمہ کو دیکھنے والے پنجاب و ہریانہ ہائی کورٹ کے وکیل اور عدلیہ سے مدد حاصل کرنے کے لئے بیداری مہم چلانے والے نبراس احمد نے اپنی خدمات مفت میں دی ہے اور جمعیۃ سے پیسہ لینے سے انکار کردیا ہے۔

مسٹر جلال الدین نے کہاکہ حکومت سے اب تک کوئی مدد نہیں ملی ہے البتہ اخبار ات کے ذریعہ معلوم ہوا ہے کہ ہریانہ حکومت نے اس کے لئے دس لاکھ روپے کی مدد کا اعلان کیا ہے۔انہوں نے کہاکہ فریدآباد کے پولیس کمشنر کے توسط سے ریڈ کراس کی طرف سے انہیں پانچ لاکھ روپے کی مدد ملی ہے۔

اس موقع پر جنید کے وکیل نبراس احمد نے کہا کہ مقدمہ صحیح سمت چل رہا ہے اور ہماری ٹیم پوری محنت سے مقدمہ کی تیاری کی ہے اور ہم اسے منطقی انجام تک پہنچائیں گے۔انہوں نے کہاکہ کسی مقدمہ کو صحیح انجام تک پہنچانے کے لئے اس کا’ فلواپ‘ بہت ضروری ہے اور اس پرہم لوگ بہت سنجیدگی سے توجہ دے رہے ہیں۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز