کون ہے عرب کا 'وارین بفے' الولید بن طلال

Nov 06, 2017 03:54 PM IST | Updated on: Nov 06, 2017 03:54 PM IST

ریاض۔ دنیا کے 45 ویں اور سعودی عرب کے سب سے امیر شخص سعودی شہزادہ الولید بن طلال کو بدعنوانی کے الزام میں گرفتار کیا گیا ہے۔ فوربس کے مطابق، طلال 17 بلین ڈالر یعنی تقریبا 1.25 لاکھ کروڑ کی دولت کے مالک ہیں۔

طلال نے انیس سو انیاسی میں اپنے والد سے تقریبا سولہ لاکھ کا قرض لے کر اپنا بزنس شروع کیا تھا۔ اس کے علاوہ اپنے والد سے ملے گھر کو گروی رکھ کر انہوں نے چار لاکھ ڈالر اکھٹا کئے اور سٹی کاپ نامی کمپنی میں سرمایہ کاری کی۔ طلال کی دو ہزار چھ میں شہزادی امیرا سے شادی ہوئی لیکن اس کے بعد دو ہزار تیرہ میں دونوں کی راہیں الگ ہو گئیں۔

کون ہے عرب کا 'وارین بفے' الولید بن طلال

طلال کی پہنچ روپرٹ مرڈوک، مائیکل بلومبرگ، بل گیٹس، برطانیہ کے شاہی خاندان اور ہالی ووڈ کی کئی نامی شخصیات تک ہے۔ 2015 میں طلال نے صدر ڈونالڈ ٹرمپ کو امریکہ کے لئے باعث شرم بتایا تھا۔ طلال کو خواتین کے حقوق کا حامی بھی سمجھا جاتا ہے۔

talaal1

عرب کا وارین بفے

روپرٹ مرڈوک کی نیوز کارپ کے علاوہ ایپل، ٹائم وارنر، ٹوئٹر، فاکس اور اے او ایل میں طلال کی بڑی حصہ داری ہے۔ طلال روٹانا کے مالک بھی ہیں جن کے کئی ٹی وی چینل عربی زبان بولنے والے ملکوں میں نشر ہوتے ہیں۔

طلال کنگڈم ہولڈنگ کمپنی کے بھی بانی ہیں جو دنیا کی سب سے بڑی سرمایہ کار کمپنیوں میں سے ایک سمجھی جاتی ہے۔ طلال کو ٹائم میگزین نے دنیا کے 100 بااثر لوگوں میں شامل کیا ہے۔

طیارہ، کار، یاٹ اور چار ہزار کروڑ کے زیورات

فوربس میں شائع ایک رپورٹ کے مطابق، طلال کے پاس 4000 کروڑ روپئے سے زائد کے زیورات ہیں۔

طلال کے پاس دنیا کا سب سے مہنگا طیارہ بوئنگ 747 ہے جسے اڑتا محل بھی کہا جاتا ہے۔ 3 ہزار کروڑ روپئے کے دنیا کی تیسری سب سے بڑی یاٹ کا مالک بھی طلال ہی ہے۔

طلال کے پاس موجود کاروں کے قافلہ میں دنیا کی ایک سے بڑھ کر ایک مہنگی تین سو کاریں موجود ہیں۔ ان میں بتیس کروڑ کی رالس رائس، تین سو دس کروڑ کی مرسڈیز، لمبارگنی اور فیراری شامل ہیں۔

سعودی شہزادہ الولید بن طلال: فائل فوٹو، اے پی۔ سعودی شہزادہ الولید بن طلال: فائل فوٹو، اے پی۔

طلال ہی دنیا کی سب سے اونچی ایک میل کی عمارت بنوا رہے ہیں ۔ یہ دبئی کے برج الخلیفہ کو پیچھے چھوڑ دے گی۔

ریاض میں واقع طلال کا گھر چار سو بیس کمروں پر مشتمل ایک محل ہے۔

طلال کے علاوہ انسداد بدعنوانی کمیٹی نے سعودی عرب کے دس شہزادوں، بحریہ سربراہ اور اقتصادی امور کے وزیر کو بھی گرفتار کیا ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز