كلبھوش جادھو نے پھانسی کی سزا کے خلاف دائر کی رحم کی درخواست : پاکستان

Jun 22, 2017 08:54 PM IST | Updated on: Jun 22, 2017 08:54 PM IST

اسلام آباد : پاکستان کی فوج کے مطابق یہاں کی فوجی عدالت کی طرف سے جاسوسی کے معاملہ میں پھانسی کی سزا پائے ہندوستانی شہری كلبھوش جادھو نے پاکستان کے فوجی سربراہ جنرل قمر جاوید کو رحم درخواست بھیجی ہے۔ انٹر سروسز پبلک ریلیشن نے ایک بیان میں دعوی کیا کہ جادھو نے اپنی درخواست میں پاکستان میں جاسوسی، دہشت گرد انہ سرگرمیوں میں اپنے ملوث ہونے کا اعتراف کیا ہے اور جان و مال کے نقصان کے لئے افسوس کا اظہار کیا ہے۔

آئی ایس پی آر نے کہا کہ اپنے فعل کے لئے معافی مانگتے ہوئے انہوں نے فوج کے سربراہ سے درخواست کی ہے کہ شفقت کی بنیاد پر ان کی زندگی بخش دیں۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ ہندوستانی بحریہ کے ریٹائرڈ افسر جادھو نے پہلے فوج کی اپیل عدالت میں فریاد کی تھی ، جسے مسترد کر دیا گیا۔

كلبھوش جادھو نے پھانسی کی سزا کے خلاف دائر کی رحم کی درخواست : پاکستان

قانون کے مطابق جادھو معافی کے لئے چیف آف آرمی اسٹاف کو اپیل کر سکتے ہیں اور مسترد کئے جانے پر پاکستان کے صدر سے رحم کی درخواست کرسکتے ہیں۔ ساتھ ہی ساتھ فوج نے ایک 'اعترافی ویڈیو بھی جاری کیا ہے ، جس میں مبینہ طور پر جادھو کو دہشت گردی اور جاسوسی کی سرگرمیوں میں ملوث ہونے کی بات کا اعتراف کرتے دیکھا جا سکتا ہے۔ فوج نے کہا کہ اس نے ویڈیو جاری کیا ہے تاکہ دنیا جان لے کہ ہندوستان نے پاکستان کے خلاف کیا کیا ہے اور کیا کرتا جا رہا ہے۔

خیال رہے کہ ہندوستان نے جادھو کو سنائی گئی پھانسی کی سزا کے خلاف آٹھ مئی کو بین الاقوامی عدالت کا دروازہ کھٹکھٹایا تھا۔ 18 مئی کو ہوئی سماعت میں عالمی عدالت کی 10 رکنی بنچ نے جادھو کی سزا پر روک لگا دی۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز