كلبھوشن جادھو کو پاکستان نے سنائی سزائے موت، جادھو جاسوسی کے الزام میں گرفتار ہوئے تھے

Apr 10, 2017 03:52 PM IST | Updated on: Apr 10, 2017 03:57 PM IST

نئی دہلی۔ كلبھوشن جادھو کو پاکستان میں سزائے موت سنائی گئی ہے۔ كلبھوشن کو پاکستان نے جاسوسی کے الزام میں گرفتار کیا تھا۔ پاکستانی ویب سائٹ کے مطابق، كلبھوشن کو ہندوستانی را ایجنٹ کا سابق بحریہ کا افسر بتایا گیا ہے۔ كلبھوشن یادو کو گزشتہ سال 3 مارچ، 2016 کو بلوچستان سے گرفتار کیا گیا تھا۔ آج پاکستانی فوج کے سربراہ جنرل قمر جاوید باجوا نے كلبھوشن کو موت کی سزا سنائے جانے کی تصدیق کی۔ پاک میں پاکستان آرمی ایکٹ کے تحت كلبھوشن کے خلاف کورٹ مارشل کی کارروائی کی گئی تھی۔

جادھو کو 2016 میں جاسوسی کے الزام میں پکڑا گیا تھا۔ كلبھوشن ممبئی کے رہنے والے ہیں۔ ہندوستان کے مطابق جادھو تاجر ہیں۔ بتایا جا رہا ہے کہ اس معاملے میں جادھو کو اپنا موقف تک رکھنے کا موقع نہیں ملا اور پاکستان کے کورٹ نے ان کے خلاف سزا سنا دی۔ پاکستان نے جادھو کو ہندوستانی جاسوس بتا کر گرفتار کیا تھا جبکہ ہندوستان کا کہنا ہے کہ جادھو ایک تاجر ہیں۔ پاکستان کے مطابق ان کی گرفتاری بلوچستان سے ہوئی تھی۔ جبکہ ہندوستان اس بات کو مسترد کرتا رہا ہے۔

كلبھوشن جادھو کو پاکستان نے سنائی سزائے موت، جادھو جاسوسی کے الزام میں گرفتار ہوئے تھے

ڈان نیوز کے مطابق جادھو کو پاکستان کے آرمی ایکٹ (پی اے اے) کے تحت فیلڈ جنرل کورٹ مارشل کے ذریعے پیش کیا گیا اور انہیں موت کی سزا سنائی گئی۔ پاکستانی فوج کے سربراہ جنرل قمر جاوید باجوا نے پیر کو جادھو کو دی گئی موت کی سزا کی تصدیق کی۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز