لاس ویگاس حملہ آور اسٹیفن پیڈوک پوکر اور جوئے کا شوقین تھا

حملہ آور کا بھائی ایرک پیڈوک نے فلوریڈا میں نامہ نگاروں سے کہا کہ اس کا بھائی امیر تھا اور ویڈیو پوکر کھیلنے اور کشتیوں میں گھومنے نیز جوا کھیلنے کا شوقین تھا۔

Oct 03, 2017 07:05 PM IST | Updated on: Oct 03, 2017 07:05 PM IST

واشنگٹن۔ امریکہ کے لاس ویگاس میں ایک موسیقی کی تقریب کے دوران ایک ہوٹل میں فائرنگ کرنے والا 64 سالہ حملہ آور اسٹیفن پیڈوک ہوٹل منیجر کے عہدہ سے ریٹائر ہونے کے بعد نیوادا میں ریٹائرمنٹ کمیونٹی میں ایک گھر لیکر سکون سے رہ رہا تھا۔ حملہ آور کا بھائی ایرک پیڈوک نے فلوریڈا میں نامہ نگاروں سے کہا کہ اس کا بھائی امیر تھا اور ویڈیو پوکر کھیلنے اور کشتیوں میں گھومنے نیز جوا کھیلنے کا شوقین تھا۔ انہوں نے کہا کہ انہیں پتہ تھا کہ اس کے بھائی کے پاس کچھ بندوقیں بھی تھیں جنہیں وہ الماری میں رکھتا تھا۔شاید اس کے پاس ایک لمبی رائفل تھی لیکن وہ خودکار نہیں تھی۔

پولیس نے بتایا کہ انہوں نے اسٹیفن کے مجموعی طورپر 34ہتھیار ضبط کئے ہیں ۔ ان میں سے 16ہتھیار ہوٹل سے اور 18اس کے گھر میکس وائٹ سے ضبط کئے گئے ہیں ۔ ان ہتھیاروں میں سے کچھ خودکار اور سیمی آٹومیٹک رائفلیں بھی ہیں۔ میکس وائٹ شہر گولف اور جوا کے لئے مشہور ہے۔ ایرک نے کہا کہ اس کا بھائی پرسکون مزاج کا تھا۔ اس نے نیوادا ہلس میں گھر لیا کیونکہ وہاں جوا قانونی ہے۔ وسطی فلوریڈا میں حبس کی وجہ سے وہ وہاں سے نفرت کرتا تھا۔ انہوں نے کہا کہ میکس وائٹ پر وہ اپنی خاتون دوست کے ساتھ رہتا تھا لیکن فائرنگ کے وقت وہ خاتون ٹوکیو میں تھی۔

لاس ویگاس حملہ آور اسٹیفن پیڈوک پوکر اور جوئے کا شوقین تھا

لاس ویگاس میں دو اکتوبر کو موسیقی کی ایک تقریب کے دوران ایک خاتون باہر بیٹھی ہوئی۔ تصویر، اے پی۔

لاس ویگاس کی پولیس نے کہا کہ خاتون کے یہاں واپس آنے پر اس سے بھی پوچھ گچھ کی جائے گی۔ حالانکہ انہوں نے کہا کہ خاتون کا اس حملہ سے کوئی تعلق نہیں ہے۔ پولیس نے بتایا کہ پیڈوک کا باپ بینک لٹیرا تھا جو ایف بی آئی کی مطلوبہ افراد کی فہرست میں شامل تھا۔ بہرحال اسٹیفن پیڈوک کا کوئی مجرمانہ یکارڈ نہیں تھا۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز