فرانس کے پارلیمانی انتخابات میں میخواں کو ملی زبردست اکثریت

Jun 19, 2017 11:26 AM IST | Updated on: Jun 19, 2017 11:26 AM IST

پیرس۔  فرانس کے پارلیمانی انتخابات میں موجودہ صدرایمینوئیل میخواں کی پارٹی لاء ریپبلک این مارش اور اسکی اتحادی ڈیموکریٹک موومنٹ پارٹی نے واضح اکثریت حاصل کر لی ہے۔ اعتدال پسند میخواں اسی سال مئی میں ہوئے صدارتی انتخابات میں ملک کے پہلے نوجوان صدر منتخب ہوئے تھے۔ انہیں 66.06 فیصد ووٹ حاصل ہوئے تھے ۔ میخواں کی پارٹی سال بھر پہلے ہی وجود میں آئی تھی اور اس کے بہت سے ارکان نے پہلے کسی سرکاری عہدے پر کام نہیں کیا۔ تین انتخابی سروے میں میخواں کی ریپبلک این مارش اور اس کی اتحادی پارٹی کو 577 سیٹوں والی قومی اسمبلی میں 355 سے 365 نشستیں جیتتی ہوئی نظر آ رہی ہیں۔

اس سے پہلے یہ قیاس آرائی کی گئی تھی کہ اپوزیشن کی سب سے بڑی پارٹی کنزرویٹیوو ریپبلک اور اس کی اتحادیی پارٹیوں کو 125 سے 131 جبکہ سوشلسٹ پارٹی اور اس کی اتحادی جماعتوں کو 41 سے 49 سیٹیں مل سکتی ہے۔ پارٹی کی عبوری صدر کیتھرین بارباڈو نے کہا ہے کہ ملک کے صدر اور وزیر اعظم کے پاس اب واضح طور پر قومی اسمبلی میں اکثریت ہے اور اب فرانس کے لوگوں سے ایمینوئیل میخواں نے جو وعدے کئے تھے وہ ان کو پورا کر سکیں گے۔ اس دوران دائیں بازو کی پارٹی نیشنل فرنٹ کی لیڈر میرین لے پین نے ملک کے پارلیمانی انتخابات میں پہلی بار کامیابی حاصل کی ہے۔ میرین صدارتی انتخابات میں بھی اتری تھیں لیکن انہیں 33.94 فیصد ووٹ ملے تھے۔ میرین کے ساتھ نیشنل فرنٹ کے سات اور امیدواروں نے جیت درج کی ہے۔

فرانس کے پارلیمانی انتخابات میں میخواں کو ملی زبردست اکثریت

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز