فرانس کے ایمینوئل میکرون کے واضح اکثریت کے ساتھ صدارتی انتخابات میں کامیاب ہونے کا امکان

May 08, 2017 09:44 AM IST | Updated on: May 08, 2017 09:44 AM IST

پیرس : پیرس میں صدارتی الیکشن کے دوسرے مرحلے کا الیکشن آج اختتام پذیر ہوگیا اور ایمینوئل میکرون نے اپنے حریف میرین لے پین کو بھارتی اکثریت سے ہرادیا۔ مقامی میڈیا میں آئی خبروں کے مطابق پولنگ ختم ہونے کے بعد جاری پانچ رجحانوں میں مسٹر میکرون نے اپنے کمیونسٹ حریف میری لے پین کو 34 کے مقابلے 65 فیصد ووٹوں سے ہرادیا ہے اور اب ایسے امکانات ظاہر کئے جارہے ہیں کہ ایمینوئل میکرون فرانس کے اگلے صدر ہوں گے۔

میکرون فرانس کے سب سے نوجوان صدر ہوں گے۔ 39 سالہ ایمینوئل میکرون لبرل نظریات کے حامی ہیں جو کارروباریوں اور یوروپی یونین کے حامی ہیں جبکہ میری لے پین فرنا کے تارکین وطن مخالف پالیسی کی حامی ہیں ۔ الیکشن میں مسٹر میکرون کا معیشت کو پابندیوں سے آزاد کرنا اور یوروپی یونین کے اتحاد کو تیز کرنے پر زور تھا جبکہ اس کے برعکس نیشنل فرنٹ کی امیدوار محترم پین یوروپی یونین مخالف اور امیگریشن مخالف تھیں۔

فرانس کے ایمینوئل میکرون کے واضح اکثریت کے ساتھ صدارتی انتخابات میں کامیاب ہونے کا امکان

مسٹر میکرون کے سامنے کئی طرح کے چیلنج موجود رہیں گے۔ میکرون کی پارٹی این مارشوہ کے پاس پارلیمنٹ میں ایک بھی سیٹ نہیں ہے۔ صدارتی الیکشن کے بعد اگلے ہی مہینے پارلیمنٹ کے الیکشن ہونے ہیں۔ این مارشوہ کو الیکشن لڑنا ہوگا۔ میکرون کو اپنی حالت مضبوط کرنے کے لئے گٹھ جوڑ کا سہارا بھی لینا پڑسکتا ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز