نوبل انعام یافتہ سماجی کارکن ملالہ آکسفورڈ یونیورسٹی میں داخلہ کے لئے منتخب

Aug 17, 2017 09:38 PM IST | Updated on: Aug 17, 2017 09:38 PM IST

برمنگھم۔  سب سے کم عمر کی نوبل انعام یافتہ پاکستانی سماجی کارکن ملالہ يوسف زئی کا انتخاب گریجویشن کی تعلیم کےلئے دنیا کی سب سے اعلی یونیورسٹیوں میں سے ایک برطانیہ کی آکسفورڈ یونیورسٹی میں ہو گیا ہے جس سے وہ بہت خوش ہے۔ ملالہ نے آج ٹویٹ کرکے بتایا کہ اسکول کی پڑھائی کے بعد آگے کی تعلیم کے لئے اس کا آكسفورڈ یونیورسٹی میں داخلہ ہو گیا ہے جہاں وہ معاشیات، سیاست اور فلسفہ پڑھےگی۔ برطانیہ کے سابق وزیر اعظم ڈیوڈ کیمرون اور پاکستان کی سابق وزیر اعظم بے نظیر بھٹو سمیت کئی اہم شخصیات نے اس یونیورسٹی سے تعلیم حاصل کی ہے۔

بیس سالہ ملالہ اس وقت شہ سرخیوں میں آئی تھی جب 2012 میں ایک مسلح طالبان نے اس کے سر میں گولی مار دی تھی۔ عورت کی تعلیم کے لئے اس مہم کو لے کر وہ طالبان کے نشانے پر تھی۔ وہ اس حملے میں شدید زخمی ہوئی تھی اور اس کا برطانیہ میں علاج ہوا۔ صحت مند ہونے پر اس نے وہیں پر اسکول کی تعلیم مکمل کی۔ شدید زخمی ہونے کے بعد بھی ملالہ نے اپنا حوصلہ قائم رکھا تھا اور لڑکیوں کی تعلیم کے حق میں اپنی مہم بھی جاری رکھی۔ سال 2014 میں اسے نوبل انعام سے نوازا گیا تھا۔

نوبل انعام یافتہ سماجی کارکن ملالہ آکسفورڈ یونیورسٹی میں داخلہ کے لئے منتخب

بیس سالہ ملالہ اس وقت شہ سرخیوں میں آئی تھی جب 2012 میں ایک مسلح طالبان نے اس کے سر میں گولی مار دی تھی۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز