فرانس : صدارتی انتخابات میں شکست کے بعد سیاست چھوڑیں گی میرین لے پین

May 10, 2017 10:21 AM IST | Updated on: May 10, 2017 10:21 AM IST

پیرس : فرانس میں ہوئے صدارتی انتخابات میں ملی شدید ہار کے بعد نیشنل فرنٹ پارٹی کی رہنما میرین لے پین اب جلد ہی سیاست چھوڑ دیں گی۔  مقامی میڈیا میں جاری خبروں کے مطابق 27 سال کی لے پین نیشنل فرنٹ پارٹی کی رہنما ہیں اور انہیں پارٹی کے مستقبل کے رہنما کے طور پر دیکھا جا رہا تھا۔ صدارتی انتخابات میں اعتدال پسند نظریے کے رہنما ایمینئل میكرون کو 66.06 فیصد ووٹ ملے ہیں جبکہ مرین لے پین صرف 33.94 فیصد ووٹ حاصل کر پائیں۔

لے پین نے بھی انتخابات ہارنے کے چند گھنٹے بعد ہی کہا تھا کہ پارٹی کو نظر ثانی کرنے کی ضرورت ہے اور اس کا آغاز وہ فوری طور پر کریں گی تاکہ آئندہ پارلیمانی انتخابات میں انہیں کامیابی حاصل ہو سکے۔لےپین نیشنل فرنٹ پارٹی کی بانی جین لے پین کی پوتی ہیں۔

فرانس : صدارتی انتخابات میں شکست کے بعد سیاست چھوڑیں گی میرین لے پین

لی فگاروکے مطابق محترمہ میرین لے پین بدھ کو جون میں ہونے والے پارلیمانی انتخابات نہیں لڑنے کا اعلان کریں گی۔ اس کے علاوہ وہ پارٹی کے صدر کے عہدے سے بھی استعفی دیں گی۔

خبروں کے مطابق ایسا سمجھا جاتا ہے کہ لے پین اب اپنی بیٹی کے ساتھ کچھ وقت بتاناچاہتی ہیں۔ اگرچہ نیشنل فرنٹ پارٹی نے ابھی تک اس کی تصدیق نہیں کی ہے۔ لیکن پارٹی کے افسر نے بتایا ہے کہ اب وہ عوامی زندگی سے دور ہونا چاہتی ہیں۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز