رجب طیب اردوغان کی قطر کے خلاف پابندی ہٹانے کی اپیل ، مدد کیلئے ترکی نے بڑھایا ہاتھ

Jun 10, 2017 09:54 AM IST | Updated on: Jun 10, 2017 10:40 AM IST

استنبول :  ترکی کے صدر طیب اردوغان نے قطر کے خلاف پابندیوں کو ہٹانے کے لئے عرب ممالک پر زور دیا ہے۔ مسٹر اردوغان نے استنبول میں کل روزہ افطارکے دوران کہا’’ میں خلیجی ممالک کے رہنماؤں اور شہریوں سے اپیل کرتا ہوں، اس جنگ میں کوئی فاتح نہیں ہو گا اور ہر طرف ہماری بدنامی ہوگی‘‘۔ انہوں نے قطر کے خلاف عائدتمام پابندیوں کو ختم کرنے اور بات چیت کے ذریعے تنازعات کو حل کرنے کے لئے سعودی عرب پر زور دیا ہے۔

ادھرترکی کی پارلیمنٹ نے قطر میں فوج کی تعیناتی کی تجویز کو منظوری دے دی ہے۔ اس کے علاوہ ترکی نے بحران کا شکار قطر کو ہر ممکن مدد دینے کی بھی تجویز پیش کی ہے۔ ترکی کے صدر طیب ارودغان نے تجویز کو پارلیمنٹ سے منظور کرانے کے بعد اس سلسلے میں سرکاری نوٹیفکیشن بھی جاری کر دیا ہے۔ درین اثنا قطر نے پھر کہا ہے کہ وہ کسی بھی دہشت گرد تنظیم کی حمایت نہیں کرتا اور نہ ہی وہ جھوٹے الزامات کی وجہ سے کسی ملک کے آگے جھکے گا۔

رجب طیب اردوغان کی قطر کے خلاف پابندی ہٹانے کی اپیل ، مدد کیلئے ترکی نے بڑھایا ہاتھ

فائل فوٹو

واضح ر ہے کہ پیر کو سعودی عرب، مصر، متحدہ عرب امارات سمیت چھ ممالک نے دہشت گرد تنظیموں کی مدد کرنے کا الزام لگاتے ہوئے قطر سے اپنے تعلقات توڑے لئے تھے۔ وہاں جانے اور آنے والے ایئر لائنز کو منسوخ کر دیا تھا۔ تجارتی تعلقات بھی ختم کر دیئے تھے۔ اس کی وجہ سے قطر میں غذائی اجناس اور پینے کے پانی کی کمی ہو گئی ہے۔ قطر پر پابندی لگانے والے اہم ممالک نے 59 لوگوں کو بلیک لسٹ میں بھی ڈالنے کا اعلان کیا ہے۔ جن لوگوں کو بلیک لسٹ میں ڈال کر انہیں مطلوبہ قرار دیا گیا ہے ان میں زیادہ تر لوگ قطر کے ہیں۔ ان میں اخوان المسلمون تنظیم کے عہدیدار بھی شامل ہیں۔

قابل ذکر ہے کہ ترکی اور قطر مصر کی تنظیم اخوان المسلمون کے حامی ہیں۔ یہ تنظیم مصر میں کئی سال سے سرکاری فوجوں کے ساتھ جدوجہد کر رہی ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز