بیوی نے لگایا حمل کی حالت میں لات۔گھونسوں سے پیٹنے کا الزام، پاکستانی اداکار نے قرآن شریف پر ہاتھ رکھ کی 50 منٹ کی پریس کانفرنس

پاکستان کے مشہور اداکار کی بیوی کا الزام، مجھے حمل کی حالت میں زمین پر گھسیٹ کر لات گھونسوں سے مارا۔

Jul 23, 2019 11:50 AM IST | Updated on: Jul 23, 2019 01:54 PM IST
بیوی نے لگایا حمل کی حالت میں لات۔گھونسوں سے پیٹنے کا الزام، پاکستانی اداکار نے قرآن شریف پر ہاتھ رکھ کی 50 منٹ کی پریس کانفرنس

پاکستان کے مشہور اداکار محسن عباس حیدر اور ان کی اہلیہ فاطمہ سہیل کے درمیان لڑائی اور طول پکڑتی جارہی ہے۔ پہلے فاطمہ سہیل نے ایک لمبی فیس بک پوسٹ لکھ کر اپنے اداکار شوہر پر حاملہ ہونے کے دوران لاتوں۔گھونسوں سے بری طرح پیٹنےکے الزام لگائے تھے۔ اب اداکار نے میڈیا کے سامنے ایک 50 منٹ کی پریس کانفرنس کی ہے۔ اس میں انہوں نے مسلسل اپنا ایک ہاتھ قرآن پر رکھا ہواتھا۔

پاکستانی اداکارنے  قرآن پاک پرہاتھ رکھ کر کی پوری کانفرنس: اپنی بیوی کی طرف سے الزام لگنے کے بعد ہی محسن عباس حیدر نے سارے سوالوں کے جواب پریس کانفرنس میں دینے کو کہا۔ بعد میں جب وہ پریس کانفرنس کرنے آئے تو اپنے ساتھ قرآن پاک لیتے آئے۔ انہوں نے اپنی باتوں کے سو فیصدی سچ ہونے کا یقین دلانے کیلئے پریس کانفرنس کے دوران اپنا ایک ہاتھ قرآن پر رکھے رکھا۔

اس وجہ سے ہوئی تھی تکرار

محسن نے کہا 'شادی کے بعد سے ہی فاطمہ کو مجھ سے پریشانی شروع ہوگئی تھی۔ ہم بس اس فیصلے پر پہنچ گئے تھے کہ ایک دوسرے سے الگ ہوجائیں۔ میں فاطمہ کو طلاق دینے کیلئے کاغذات بھی تیار کررہا تھا۔ تبھی وہ حاملہ ہوگئیں۔ اس کے بعد میں نے انہیں اس حالت میں طلاق دینا واجب نہیں سمجھا۔ بچہ ہونے کے بعد جتنی مرتبہ میں نے انہیں طلاق دینے کا سوچا میرے سامنے بچے کا چہرہ آگیا'۔

Loading...

طلاق نہیں پر الگ ہوکر کرنا چاہتا تھا دوسری شادی: محسن 

اداکار کے مطابق 'بچہ ہونے کے بعد میں نے طلاق کا من بدل دیا۔ ایک مرتبہ انتظار کیا کہ شاید سب ٹھیک ہوجائے۔ میں قرآن پر ہاتھ رکھ کر کہہ رہا ہوں میں نے ان سے رشتہ سدھارنے کی کوشش کی لیکن ہم ایسا نہیں کر پا رہے ہیں، بعد میں میں نے ان سے الگ ہوکر اپنے مذہب اور قانون کے مطابق دوسری شادی کا من بنایا'۔

پاکستانی ہیرو نے کہا، 'میرے اور ان کے دونوں کے کنبوں کو یہ بات معلوم ہے کہ ہم الگ رہ رہے ہیں۔ ہم الگ ہونا چاہتے ہیں۔ کئی ماہ سے وہ الگ ہی رہ رہی ہیں۔ یہاں تک کہ مجھے بچے سے ملنے جانا ہوتا ہے تب بھی میں ان کے گھر کے باہر ہی کھڑا رہتا ہوں۔ وہیں سےمل کر لوٹ آتا ہوں'۔

وہ نہ میرے ساتھ رہنا چاہتی ہیں نہ مجھے چھوڑنا چاہتی ہیں: محسن

محسن عباس حیدر کے مطابق "اب  فاطمہ  میرے  خلاف  سازش  اور  منصوبہ  بند  طریقے  سے  الزام  لگا  رہی  ہیں۔  انہوں  نے  ٹھان  لیا ہے کہ وہ نہ تو مجھے رہا کریں گی اور نہ ہی میرے ساتھ رہیں گی۔ یہ سارے الزام انہوں نے مجھے پھنسانے اور الجھانے کیلئے لگائے ہیں'۔

اس ٹی وی شو میں میرے بیان کے بعد رچی گئی سازش

محسن نے کہا، "ایک ٹی وی شو میں میرا انٹرویو چل رہا تھا۔ وہاں بار۔بار مجھ سے میری نجی زندگی کو لیکر اور فاطمہ کو لیکر سوال پوچھا جارہا تھا۔ وہاں میں نے بس اتنا کہا کہ نجی زندگی بھی چل رہی ہے۔ اس سے فاطمہ خاصی ناراض ہو گئیں۔ انہوں نے کہا میں نے ٹی وی میں نجی زندگی کے بارے میں ایسا کیوں کہا۔ اس کے بعد وہ رات کے دو بجے میرے دروازے پر بچے کو لیکر آگئیں۔  یہ پورا منصوبہ بند طریقے سے کیا گیا۔ جان بوچھ کر وہ رات کو آئی تھیں۔ اس کے بعد انہوں نے کہا کہ وہ نہیں جائیں گی۔ گھر ان کے نام کیا جائے'َ۔

میرے فیس بک اکاؤنٹ کے پاس ورڈ ان کے پاس تھے: محسن

محسن کے مطابق جو کچھ بھی حال۔فی الحال فاطمہ کو جواب دئے جارہے ہیں۔ وہ میں نے نہیں دئے۔ میرے فیس بک کے پاس ورڈ ان کے پاس رہتے ہیں، جب میاں۔بیوی ساتھ ہوتے ہیں تو فیس بک پاس ورڈ ایک دوسرے کے پاس ہونا بڑی بات نہیں ہے۔ ہو سکتا ہے کسی نے یہ اکاؤنٹ ہیک کرلیا ہو۔ میرے انسٹاگرام کو بھی ہیک کرنے کی کوشش کی جارہی ہے۔

میرے ناجائز رشتوں کی بات غلط

قابل ذکر ہے کہ بیوی نے فیس بک پوسٹ میں کہا تھا کہ انہوں نے اپنے شوہر کو دوسری خاتون کے ساتھ رنگے یاتھوں پکڑ لیا تھا۔ یہی نہیں جب وہ اسپتال میں بچے کو پیدا کرنے کیلئے درد سے کراہ رہی تھیں تب ان کا شوہر کسی دوسری خاتون کےساتھ رنگ رلیاں منارہا تھا۔ اس بارے میں محسن نے شہریار نام کے پروڈیوسر کے حوالے سے کہا کہ وہ فلم کی شوٹنگ میں مصروف تھے۔ ساتھ ہی انہوں نے کہا کہ اگر فاطمہ اس بات کو لیکر ثبوتوں پر آتی ہیں تو ان کے اوپر کیس بھی کیا جاسکتا ہے۔

Loading...