روحانی پیشوا پوپ فرانسیس کی مسلم لیڈروں سے مذہبی انتہا پسندی اور جنونیت کے خلاف متحد ہونے کی اپیل

Apr 30, 2017 12:01 PM IST | Updated on: Apr 30, 2017 12:01 PM IST

دبئی: رومن کیتھولک کے روحانی پیشوا پوپ فرانسیس نے مسلم رہ نماؤں پر زوردیا ہے کہ وہ مذہبی انتہا پسندی اور جنونیت کے خلاف متحد ہوجائیں۔ انھوں نے یہ بات مصر کے دارالحکومت قاہرہ میں ہفتے کے روز سخت سکیورٹی میں منعقدہ عوامی جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے کہی ۔انھوں نے اقلیتوں کے لیے مذہبی آزادیوں کی اپیل کرتے ہوئے انتہا پسندوں پر اللہ کی رحمت اور رحمانیت کے تصور کو داغدار کرنے کا الزام عاید کیا ۔

قاہرہ کے ائیر ڈیفنس اسٹیڈیم میں سخت سکیورٹی میں پوپ فرانسیس کے عوامی جلسہ کا اہتمام کیا گیا تھا جہاں ویٹی کن کے حکام کے مطابق تقریباً پندرہ ہزار افراد جمع تھے۔ ان میں قبطی اور اینجلیکن پادری بھی شامل تھے۔اسٹیڈیم میں لوگوں کی آمد صبح ہی سے شروع ہوگئی تھی۔انھوں نے مصر اور ویٹی کن کے پرچم اٹھارکھے تھے۔پوپ نے ایک گولف بگھی میں اسٹیڈیم کا چکر لگایا۔اس دوران امن کے گیت گائے جارہے تھے اور دھنیں بج رہی تھیں۔

روحانی پیشوا پوپ فرانسیس کی مسلم لیڈروں سے مذہبی انتہا پسندی اور جنونیت کے خلاف متحد ہونے کی اپیل

پوپ فرانسیس نے عوامی جلسہ کے اختتام پر مختلف ادیان کے پیروکاروں کے درمیان رواداری کی اپیل کا اعادہ کیا اور کہا کہ مصر ان اقوام میں سے ایک ہے جنھوں نے بالکل ابتدا میں عیسائیت کو قبول کیا تھا۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز