جیون سمواد: احسانات اتارنے کےلئے ہمیں کس حد تک جانا چاہئے!۔

ہم سب کو یہ سمجھنے کی ضرورت ہے کہ زندگی میں دوسرے کا کردارکہاں تک اورکتنا ہونا چاہئے۔ یہاں دھیان رہے کہ آپ کے علاوہ یہاں ہرکوئی دوسرا ہے۔

Jul 22, 2019 05:10 PM IST | Updated on: Jul 22, 2019 05:27 PM IST
جیون سمواد: احسانات اتارنے کےلئے ہمیں کس حد تک جانا چاہئے!۔

زندگی میں سب سے خاص بات ہےانسان کی شکل میں ہمارا موجود ہونا۔

زندگی کسی ایک شخص کےبھروسےنہیں ہوتا۔ اس میں الگ الگ سطح پرمختلف اشخاص کا تعاون اوررول ہوتا ہے۔ پودے کے پیڑبننےکا عمل بہت حد تک بچےکےبڑے ہونےکی کہانی ہے۔ رانچی سےانامیکا جھا نے لکھا ہےکہ وہ اپنی زندگی میں فیصلے کی آزادی سے دورچلی گئی ہیں۔ ان کی پرورش میں والد کےساتھ ہی بھائی، ماما اورچچا کا اتنا اہم رول رہا ہےکہ اب جبکہ وہ بینک میں اپنےلئےایک اچھی نوکری حاصل کرچکی ہیں، ان کے احسان اب بھی انہیں اپنا فیصلہ لینےسے روکتے ہیں۔

والد چاہتے ہیں کہ انامیکا کی شادی ان کی پسند سے ہو، دھوم دھام سے ہو، جس میں تخمینہ لاگت 10,00,000 روپئے ہےجبکہ بھائی چاہتےہیں کہ وہ شادی کے بعد بھی اپنے والد کے گھرمیں ہی رہیں، جس سےان کی اقتصادی حالت میں کوئی پریشانی نہ آئے۔ ماما اورچچا کی بھی اسی طرح کی چھوٹی چھوٹی امیدیں ہیں، جوپیارسےزیادہ مالی مفاد اورسماجی ساکھ سے متعلق ہیں۔

Loading...

انا میکا 'ڈیئرزندگی: جیون سنواد' کی مستقل قاری ہیں۔ انہوں نےلکھا ہےکہ وہ بہت حد تک اس سوال کا جواب تلاش کرنے میں مصروف ہیں کہ جن کےاحسانات سے ہم دبے ہوئے ہیں، ان کواپنی زندگی میں کتنا دخل دینےکا اختیاردینا چاہئے۔ اس کےبعد بھی ایک عجیب قسم کا جرم ان کےاندرامنڈتا رہتا ہے۔ سب سے پہلے توانامیکا کواس بات کی مبارکباد کہ انہوں نے اسے 'بحران' سمجھا۔ ورنہ ہم میں سے بہت سے لوگ اس سے جدوجہد کرتے رہتے ہیں، لیکن اسےقبول کرنےاوراس کے حل کی طرف بڑھتے ہی نہیں ہیں۔

اس بارے میں ہم مسلسل اس کالم میں چرچا کرتے رہے ہیں، اس لئے میں بہت تفصیل میں تو نہیں جاوں گا، پھربھی ان کے سوال کوسمجھانےکی کوشش کروں گا۔ آپ کوبات عجیب لگ سکتی ہے، لیکن میں آپ کواس کےلئےمہابھارت کے سفرپرلے جانا چاہوں گا۔ اس کی ایک وجہ یہ بھی ہےکہ میں نےآج ہی شیواجی ساونت کےکرن پرمبنی مشہورناول 'مرتنجے' کو دوسری بارپڑھ کرختم کیا ہے۔ کرن کی پوری زندگی کیا ہے؟ اس کےبہت سے مطلب ہیں، لیکن ہمارے آج کےماحول میں صرف اتنا کہ دوسروں کےاحسان کے بوجھ تلے رہتے ہوئے ہم ایک سرحد کےآگے نہیں جاسکتے۔ کرن جیسا اچھا، محنتی اورمنفرد شخص اپنی زندگی میں بہت ساری ناکامی اورذلت برداشت کرتے ہوئے صرف احسان اتارنے کے لئے نا انصافی میں حصہ داربنتا ہے۔

زندگی میں سب سے اہم بات ہے، انسان کےطورپرہمارا ہونا۔ ہم ہیں توسب کچھ ہے، ہم نہیں ہیں توکچھ بھی نہیں۔ میں آپ کواحسان فراموش ہونے کے لئےنہیں کہہ رہا ہوں۔ میں آپ سے صرف اتنا کہہ رہا ہوں کہ جب بھی کوئی آپ پرنامناسب دباوڈالے، ایسا کام کرنے کےلئے کہے، جوانسان اورانسانیت کےاصولوں کےخلاف ہے، توفوراً سارے پاس ولحاظ چھوڑ دیجئے۔ لحاظ کےساتھ آپ کولالچ بھی چھوڑنےہوں گے۔ کئی بارہم لحاظ میں لالچ کوشامل کرنےکےبعد 'انصاف' کی تلاش میں نکلتے ہیں۔ ایک مکمل اورخوشحال زندگی کے لئےاس اشتراک سے بچنا ہی ہوگا۔ انامیکا کے ساتھ ہی ہم سب کویہ سمجھنے کی ضرورت ہےکہ زندگی میں دوسرے کا کردارکہاں تک اورکتنا ہونا چاہئے۔ یہاں خیال رہے کہ 'آپ کے' علاوہ یہاں ہرکوئی دوسرا ہے۔

Email: dayashankarmishra2015@gmail.com

Address: Jeevan Sanvad (Dayashankar Mishr)

Network18

Express Trade Tower,3rd Floor, A Wing,

Sector 16, A, Film City, Noida (UP)

اپنے سوالات اورمشورے انباکس میں شئیرکریں۔

(https://twitter.com/dayashankarmi )(https://www.facebook.com/dayashankar.mishra.54 )

Loading...