مہاراشٹربجٹ: اقلیتوں کےلئے مختص 100 کروڑکا مسلمانوں کوکوئی فائدہ نہیں ہوگا: ابوعاصم اعظمی– News18 Urdu

مہاراشٹربجٹ: اقلیتوں کےلئے مختص 100 کروڑکا مسلمانوں کوکوئی فائدہ نہیں ہوگا: ابوعاصم اعظمی

ابوعاصم اعظمی نےکہا کہ اس میں مختص رقم اونٹ کے منہ میں زیرا ہےکیونکہ اقلیتوں میں صرف مسلمان ہی نہیں دوسرے طبقات بھی آتے ہیں اس لئے جورقم دے کرسیاسی کھیل کرنے کی کوشش کی گئی ہے، اس کا استعمال بھی انتہائی مشکل ہے۔

Jun 18, 2019 11:34 PM IST | Updated on: Jun 18, 2019 11:34 PM IST

ممبئی:  مہاراشٹر سماجوادی پارٹی لیڈراور رکن اسمبلی نے ریاستی بجٹ کواسمبلی انتخابات بجٹ قراردیتے ہوئے کہا ہےکہ جوبجٹ پیش کیا گیا ہے، اس کی رقومات کا استعمال تودوربلکہ اس بجٹ سےعوام کو کوئی فائدہ نہیں ہوگا کیونکہ اس کے بعد ہی ضابطہ اخلاق نافذ ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ ریاست کوقرض کے بوجھ تلے ڈبو دیا ہے۔ اس بی جے پی سرکار نے اقلیتوں کے لئے 100کروڑ روپئے کچھ اس انداز میں مختص کئے ہیں کہ ایسا محسوس ہوکہ یہ اقلیتوں کی ہمدرد ہے۔ اقلیتوں کوجوحصہ دیا گیا ہے، مسلمانوں کے بجٹ میں کوئی بڑا حصہ نہیں ہے۔

ابوعاصم اعظمی نے کہا کہ اس میں مختص رقم اونٹ کے منہ میں زیرا ہےکیونکہ اقلیتوں میں صرف مسلمان ہی نہیں دوسرے طبقات بھی آتے ہیں اس لئے جورقم دے کرسیاسی کھیل کرنے کی کوشش کی گئی ہے، اس کا استعمال بھی انتہائی مشکل ہے کیونکہ سرکارکی نیت نہیں ہے کہ وہ اقلیتوں کی فلاح پرتوجہ د ے مسلمانوں کے کئی مسائل ہیں، لیکن بی جے پی کا ایجنڈا ہی ان کےعائلی مسائل اورشریعت میں مداخلت کرنا ہے۔

مہاراشٹربجٹ: اقلیتوں کےلئے مختص 100 کروڑکا مسلمانوں کوکوئی فائدہ نہیں ہوگا: ابوعاصم اعظمی

ابو عاصم اعظمی: فائل فوٹو

سماجوادی پارٹی کے لیڈرنےالیکشن بجٹ قرار دیتے ہوئے ہرمحاذ پرسرکارکی ناکامیوں کو بتاتے ہوئے اسے کسان مخالف سرکار قراردیا ہے کیونکہ بی جے پی کے دوراقتدارمیں سب سے زیادہ کسانوں نے خودکشی کی ہے۔ ان کے مکمل قرض معافی کا وعدہ بھی صرف دعوی رہا۔ ریاست میں آ ج بھی قحط سالی اورپانی کی قلت عام ہے۔ ریاست میں عوامی مسائل پر سرکارکا کوئی کنٹرول نہیں ہے۔

Loading...

Loading...