صحافی اجودھیا معاملے میں آگ میں گھی نہیں ڈالیں : اکھیلیش یادو– News18 Urdu

صحافی اجودھیا معاملے میں آگ میں گھی نہیں ڈالیں : اکھیلیش یادو

بہرائچ۔ اترپردیش کے وزیراعلی اکھیلیش یادو نے کہا کہ صحافی سوچ سمجھ کر اپنی ذمہ داری ادا کریں اور اجودھیا معاملے میں آگ میں گھی ڈالنے کا کام نہیں کریں۔

Dec 23, 2015 08:37 AM IST | Updated on: Dec 23, 2015 08:37 AM IST

بہرائچ۔ اترپردیش کے وزیراعلی اکھیلیش یادو نے  کہا کہ صحافی سوچ سمجھ کر اپنی ذمہ داری ادا کریں اور اجودھیا معاملے میں آگ میں گھی ڈالنے کا کام نہیں کریں۔ وزیراعلی نے کہاکہ سماج وادی پارٹی (ایس پی) نے فرقہ پرست طاقتوں کو شکست دی ہے۔ اجودھیا کا معاملہ سپریم کورٹ میں زیرالتوا ہے لہذا صحافی سوچ سمجھ کر اپنی ذمہ داری ادا کریں۔ حکومت آئین اور قانون کے تحت کام کرے گی۔

وزیراعلیٰ اکھیلیش یادو نے کل شراوستی میں نامہ نگاروں کے سوال کے جواب میں یہ بات کہی۔ کئی پروجیکٹوں کا سنگ بنیاد اور افتتاح کرنے آئے وزیراعلی سے نامہ نگاروں نے اجودھیا میں وشو ہندو پریشد (وی ایچ پی) کے ذریعہ رام مندر کی تعمیر کے لئے پتھرتراشے جانے اور زیادہ پتھر منگائے جانے کے تعلق سے سوال پوچھا تھا۔ انہوں نے جواب میں کہاکہ صحافیوں سے گزارش ہے کہ آگ میں گھی ڈالنے کا کام نہ کریں۔ حکومت اپنا کام کرے گی۔

صحافی اجودھیا معاملے میں آگ میں گھی نہیں ڈالیں : اکھیلیش یادو

وزیراعلی اکھیلیش یادو نے کہاکہ بھارتیہ جنتا پارٹی ملک کو کس سمت میں لے جانا چاہتی ہے یہ ایک سنگین سوال ہے۔ انہوں نے شراوستی کے ہیڈکوارٹر کو بہرائچ سے جوڑنے کے لئے یہاں کے لوگوں کو فور لین کا تحفہ دیا۔ انہوں نے سبھی سے اپیل کی کہ وہ فورلین پر اپنی رفتار کو کنٹرول میں رکھیں اور تیز گاڑی نہ چلائیں۔ انہوں نے 2014-15کے453 میدھاوی طلبا اور طالبات کو لیپ ٹاپ اور 2015-16 کے لئے 222 میدھائی طالبات کو ’کنیا ودیا دھن‘ کے چیک تقسیم کئے اور 2015کے سماجوادی پنشن کے 500 پنشن یافتگان کو شناخت کارڈ تقسیم کئے۔