امت شاہ کا یوپی حکومت پر نشانہ ، اکھلیش سرکار مرکزی اسکیموں کے نفاذ میں کررہی ہے ٹال مٹول– News18 Urdu

امت شاہ کا یوپی حکومت پر نشانہ ، اکھلیش سرکار مرکزی اسکیموں کے نفاذ میں کررہی ہے ٹال مٹول

بستی : بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے صدر امت شاہ نے آج الزام لگایا کہ اترپردیش میں اکھلیش حکومت مرکز کی اسکیموں کو نافذ کرنے میں ٹال مٹول کرکے ترقیاتی کاموں میں روکاوٹ ڈال رہی ہے۔

Jul 01, 2016 05:40 PM IST | Updated on: Jul 01, 2016 05:40 PM IST

بستی : بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے صدر امت شاہ نے آج الزام لگایا کہ اترپردیش میں اکھلیش حکومت مرکز کی اسکیموں کو نافذ کرنے میں ٹال مٹول کرکے ترقیاتی کاموں میں روکاوٹ ڈال رہی ہے۔ مسٹر شاہ نے یہاں کسان پی جی کالج میں بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جےپی) کے تنظیمی نظریے سے بنے گورکھش ریاست کے گیارہ اضلاع کے بوتھ کارکنوں کی کانفرنس کو خطاب کرتے ہوئے کہا ’’وزیراعظم نریندر مودی کا پارلیمانی حلقہ اترپردیش کے ثقافتی شہر وارانسی ہے۔ اس لحاظ سے ریاست کی ترقی میں ان کی خاص دلچسپی رہتی ہے۔ وہ اس ریاست کو ترقی یافتہ ریاست بنانا چاہتے ہیں لیکن اکھلیش یادو حکومت مرکز کے منصوبوں پر پانی پھیر رہی ہے۔ جس کی واضح مثال یہ ہے ہ وہ مرکز کی اسکیموں کے نفاذ میں ٹال مٹول کررہی ہے۔‘‘ انہوں نے کہا کہ اترپردیش میں آئندہ برس ہونے والے ریاستی اسمبلی کے انتخابات میں بی جے پی مکمل اکثریت حاصل کرکے اپنے بل پر حکومت بنائے گی اور تبھی مرکز کے ترقیاتی منصوبوں کا ریاست میں ایمانداری سے عملدرآمد ہوسکے گا۔

بستی، بلیا ، مئو اعظم گڑھ، دیوریا، کشی نگر، گورکھپور، گورکھپور مہا نگر، مہاراج گنج، سدھارتھ نگر، سنت کبیر نگر اضلاع کے بوتھ صدور کو خطاب کرتے ہوئے انہوں کہا کہ بی جے پی نے ان کارکنوں کے بل بوتے ہی گزشتہ لوک سبھا انتخابات کے دوران ریاست کی لوک سبھا کی 80سیٹوں میں سے 73پر جیت حاصل کی تھی۔ اسمبلی کے آئندہ انتخابات میں پارٹی کو جیت دلانے کے لئے بوتھ سطح کے کارکن اپنے علاقے میں پارٹی کو الیکشن جتانے کے عہد کے ساتھ کام کریں۔

امت شاہ کا یوپی حکومت پر نشانہ ، اکھلیش سرکار مرکزی اسکیموں کے نفاذ میں کررہی ہے ٹال مٹول

بی جے پی کے صدر نے کہا کہ اترپردیش کے عوام کی بدولت بیس برس کے بعد وزیر اعظم نریندر مودی کی قیادت میں مکمل اکثریت کے ساتھ مرکز میں حکومت بنی ہے۔ بی جے پی نے ملک کو ایک ایسا قابل وزیر اعظم دیا ہے جو بولنے والا ہے۔ مرکزی حکومت فیصلہ کن کام کرتی ہے۔ مرکزی حکومت کی شفافیت کی وجہ سے مخالفین بھی بدعنوانی کا کوئی الزام نہیں لگارہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ کانگریس کے نائب صدر راہل گاندھی پوچھتے ہیں کہ بی جے پی نے دو برس میں کیا کیا ہے۔ میں انہیں بتاتا ہوں کہ بی جے پی نے دو برس کی اپنی میعاد کار میں ساٹھ کروڑ جن دھن کھاتہ کھول کر سترہ کروڑ افراد کو بینکوں سے جوڑا۔ غریب ماں بہنیں جو چولہوں پر لکڑی سے کھانا بناتی تھیں، انہیں مفت پانچ کروڑ گیس کنکشن دےئے گئے۔ مدرا بینک کے ذریعے غریبوں کو روزگار فراہم کرانے کے لئے دس ہزار سے لے کر دس لاکھ تک کا قرض دیا جاتاہے۔اترپردیش کے بجلی نظام میں بہتری لانے کے لئے 40ہزار روپے مرکزی حکومت نے دیا ہے۔