بابری مسجد کے بدلے کوئی سمجھوتہ نہیں ، مضبوطی سے لڑیں گے مقدمہ : مسلم پرسنل لا بورڈ

بورڈ کے جنرل سکریٹری مولانا ولی رحمانی کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ بابری مسجد کے بدلے میں کوئی چیز نہیں لی جائے گی ۔

Jul 16, 2019 11:33 PM IST | Updated on: Jul 16, 2019 11:34 PM IST
بابری مسجد کے بدلے کوئی سمجھوتہ نہیں ، مضبوطی سے لڑیں گے مقدمہ : مسلم پرسنل لا بورڈ

مسلم پرسنل لا بورڈ نے بیان جاری کرکے کہا ہے کہ رام مندر تنازع کی لڑائی مضبوطی کے ساتھ لڑئی جائے گی ۔ بورڈ کے جنرل سکریٹری مولانا ولی رحمانی کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ بابری مسجد کے بدلے میں کوئی چیز نہیں لی جائے گی ۔ ان کے مطابق ثالثی کمیٹی سے بات چیت میں بورڈ اس لئے شامل ہوا کیونکہ اس کو سپریم کورٹ نے تشکیل دیا تھا ۔

دراصل مغربی ایشیا کے ایک اخبار گلف نیوز میں خبر شائع ہوئی تھی کہ اجودھیا تنازع کے مقدمہ میں مسلم فریق سمجھوتہ پر غور کررہا ہے ۔ اب بورڈ نے اس خبر کو مسترد کرتے ہوئے واضح کردیا ہے کہ وہ مقدمہ لڑنے کیلئے پوری طرح تیار ہے اور کسی طرح کے سمجھوتہ کی بات نہیں سوچی جارہی ہے ۔ ثالثی کمیٹی سے بات چیت پر بورڈ نے واضح کیا کہ وہ اس میں اس لئے شامل ہوا کیونکہ سپریم کورٹ کا حکم تھا ۔

Loading...

خیال رہے کہ حال ہی میں آل انڈیا مسلم پرسنل لا بورڈ کے رکن مولانا خالد رشید فرنگی محلی نے کہا تھا کہ امید پر دنیا قائم ہے اور ثالثی کمیٹی اگر کسی طرح سے اس مسئلہ کو حل کرانے کی امید بنا رہی ہے تو اس سے بہتر کچھ نہیں ہوسکتا ۔

انہوں نے کہا تھا کہ ثالثی کمیٹی اگر اس معاملہ کو حل کردے تو اس سے زیادہ اچھا کچھ نہیں ہوسکتا ، کیونکہ معاملہ اگر کورٹ میں چلا جائے گا تو پھر وہاں کتنے برسوں تک سماعت چلے گی کچھ کہا نہیں جاسکتا ۔ انہوں نے کہا کہ اس لئے ہم سب مثبت سوچ کے ساتھ انتظار کررہے ہیں کہ جب ثالثی کمیٹی نے اپنی رپورٹ سپریم کورٹ کو سونپی تو وہ ضرور کسی فیصلہ کی جانب بڑھے گی ۔

Loading...