big naxal attack in dantewada district just before chhattisgarh general elections 2019 na ووٹنگ سے 36 گھنٹے پہلے دنتےواڑہ میں نکسلی حملہ، بی جے پی رکن اسمبلی کی موت، پانچ جوان شہید– News18 Urdu

ووٹنگ سے 36 گھنٹے پہلے دنتےواڑہ میں نکسلی حملہ، بی جے پی رکن اسمبلی کی موت، پانچ جوان شہید

نکسلیوں کے اس حملہ میں بی جے پی رکن اسمبلی بھیما منڈاوی کی موت ہو گئی ہے اور چھتیس گڑھ پولیس کے پانچ جوان شہید ہو گئے ہیں

Apr 09, 2019 06:28 PM IST | Updated on: Apr 09, 2019 06:46 PM IST

چھتیس گڑہ کے دنتے واڑہ میں عام انتخابات سے ٹھیک پہلے نکسلیوں نے بڑے حملہ کو انجام دیا ہے۔ نکسلیوں نے دنتےواڑہ کے کوانکونڈا تھانہ علاقہ کے شیام گیری میں بی جے پی کے قافلہ پر نشانہ لگاتے ہوئے آئی ای ڈی دھماکہ کیا ہے۔ اس حملہ میں بی جے پی رکن اسمبلی بھیما منڈاوی کی موت ہو گئی ہے اور چھتیس گڑھ پولیس کے پانچ جوان شہید ہو گئے ہیں۔

ڈی آئی جی سندر راج پی نے کہا کہ ’’ واقعہ کی اطلاع ملی ہے۔ جائے حادثہ پر سلامتی دستے کے اضافی جوانوں کو روانہ کر دیا گیا ہے۔ تفصیلی معلومات کا انتظار ہے۔ شہید ہونے کی تصدیق فی الحال مجھے نہیں مل پائی ہے‘‘۔

ووٹنگ سے 36 گھنٹے پہلے دنتےواڑہ میں نکسلی حملہ، بی جے پی رکن اسمبلی کی موت، پانچ جوان شہید

ووٹنگ سے 36 گھنٹے پہلے دنتےواڑہ میں نکسلی حملہ

موصولہ اطلاعات کے مطابق، کوانکونڈا تھانہ علاقہ کے شیام گیری میں سلامتی دستہ کے جوانوں کا ایک قافلہ بھیما منڈاوی کے ساتھ نکلا تھا۔ اسی دوران گھات لگا کر بیٹھے نکسلیوں نے قافلہ کو نشانہ بناتے ہوئے آئی ای ڈی دھماکہ کر دیا۔

بتا دیں کہ دنتےواڑہ بستر پارلیمانی حلقہ کا حصہ ہے جہاں 11 اپریل کوووٹنگ ہونی ہے۔ ووٹنگ سے محض 36 گھنٹے پہلے نکسلیوں نے اس حملہ کو انجام دیا ہے۔ علاقہ میں نکسلی مسلسل الیکشن کے بائیکاٹ کا فرمان جاری کرتے رہے ہیں۔

عبدالحمید صدیق کی رپورٹ