جلد منتخب کیا جائے گا بی جے پی کا نیا قومی صدر، یہ 4 لیڈران طےکریں گے فیصلہ

بی جے پی کے قومی صدرکے لئےجلد الیکشن ہونے والے ہیں۔ پارٹی نےاس کےلئےسابق مرکزی وزیررادھا موہن سنگھ کوقومی الیکشن افسراوروجے سونکر، ہنسراج اہیر، سی ٹی راو کو قومی معاون الیکشن افسرمقررکیا ہے۔

Jul 20, 2019 11:07 PM IST | Updated on: Jul 20, 2019 11:22 PM IST
جلد منتخب کیا جائے گا بی جے پی کا نیا قومی صدر، یہ 4 لیڈران طےکریں گے فیصلہ

امت شاہ کے بعد بی جے پی کا آئندہ قومی صدرکون ہوگا، اس کے لئےالیکشن اب جلد ہونے والے ہیں۔ بی جے پی کےقومی صدرکےانتخاب کےلئے پارٹی نےسابق مرکزی وزیررادھا موہن سنگھ کوقومی انتخابی افسربنایا ہے۔ رادھا موہن سنگھ کےعلاوہ وجے سونکر، ہنس راج اہیراورسی ٹی روی کوقومی معاون انتخابی افسرمقررکیا گیا ہے۔

قومی الیکشن افسربی جے پی کی تمام سطح کےتنظیمی انتخاب اورپھرقومی صدرکا الیکشن منعقد کرائے جائیں گے۔ قومی الیکشن افسرپہلے ریاستی سطح پراپنی ٹیم کی تشکیل کریں گے۔ ریاستوں کےتنظیمی الیکشن کرائے جائیں گے۔ کم سے 50 فیصدی ریاستوں کےتنظیمی الیکشن منعقد ہونے کے بعد بی جے پی کےقومی صدرکےالیکشن کرائے جا سکتے ہیں۔

Loading...

قومی صدرکےلئےضروری اہلیت

بی جے پی کے آئین میں دفعہ -19 کے تحت قومی صدرکےالیکشن کی سہولت ہے۔ الیکشن ایک انتخابی کالج کی طرف سے ہوتا ہے، جس میں قومی کونسل اورریاستی کونسل کے رکن ہوتے ہیں۔ الیکشن قومی ایگزیکٹیوسےمتعینہ ضوابط کےمطابق ہوتا ہے۔ قومی صدروہی ہوگا، جوکم ازکم چارادوارتک سرگرم رکن رہنے کےساتھ کم ازکم 15 سال تک پارٹی کا بنیادی رکن رہا ہو۔

نئے قومی صدرکے نام کی اس طرح سے پیش کی جائے گی تجویز

انتخابی کالج میں سےکل 20 ارکان قومی صدرعہدے کےالیکشن کی اہلیت رکھنے والے اشخاص کےنام کی تجویزرکھیں گے۔ شرط ہےکہ یہ مشترکہ قرارداد کم ازکم پانچ ریاستوں سے بھی آنا ضروری ہے۔ جہاں قومی کونسل کے الیکشن ہوچکے ہوں۔ اس سے قبل 2016 میں ہوئے تنظیمی الیکشن میں امت شاہ تین سال کے لئے صدربنے تھے۔ بعد میں لوک سبھا الیکشن کی وجہ سےان کی مدت میں ایک سال کی توسیع کردی گئی۔ اب امت شاہ نریندرمودی حکومت میں وزیرداخلہ ہیں۔ پارٹی کےضوابط کے مطابق ایک شخص دوعہدے پرنہیں رہ سکتا ہے۔ ایسے میں جے پی نڈا کوکارگزارصدربنایا گیا ہے۔

انوپ گپتا کی رپورٹ

Loading...