پورن دیکھتے وقت ہو سکتی ہے ویڈیو ریکارڈنگ، چکانی پڑ سکتی ہے بھاری قیمت

اگر آپ کو بھی انٹرنیٹ پر پورن دیکھنے کی عادت ہے تو ہوشیار ہو جایئےکیونکہ یہ آپ کو کافی مہنگا پڑ سکتا ہے۔ دراصل سائبر سکیورٹی ایکسپرٹ نے ایک اسپیم باٹ کا پتہ لگایا ہے۔ جوکہ پورن دیکھتے وقت آپ کی ویڈیو ریکارڈنگ کرسکتا ہے۔ بعد میں اس ریکارڈنگ کو بلیک میلنگ یا سیکس ٹارشن کیلئے یوز کیا جاتا ہے۔

Aug 13, 2019 03:59 PM IST | Updated on: Aug 13, 2019 03:59 PM IST
پورن دیکھتے وقت ہو سکتی ہے ویڈیو ریکارڈنگ، چکانی پڑ سکتی ہے بھاری قیمت

علامتی تصویر۔(تصویر:نیوز18 ہندی)۔

اگر آپ کو بھی انٹرنیٹ پر پورن دیکھنے کی  عادت  ہے تو ہوشیار ہو جایئےکیونکہ یہ آپ کو کافی مہنگا پڑ سکتا ہے۔ دراصل سائبر سکیورٹی ایکسپرٹ نے ایک اسپیم باٹ کا پتہ لگایا ہے۔ جوکہ پورن دیکھتے وقت آپ کی ویڈیو ریکارڈنگ کرسکتا ہے۔ بعد میں اس ریکارڈنگ کو بلیک میلنگ یا سیکس ٹارشن کیلئے یوز کیا جاتا ہے۔ یہ اسپیم باٹ اس طرح کا پروگرام کیا گیا ہے جسے انٹرنیٹ ای میل ایڈرس جٹانےاور انہیں ان چاہے میل بھیجنے کیلئے ڈیزائن کیا گیا ہے۔ اس اسپیم باٹ کا پتہ فرانس میں لگایا گیا اور اس کا نام وارین کی (ورینکی ) ہے۔

دراصل ہیکرس وائرس کی مدد سے یوزرس کے کمپیوٹر کا ایکسز حاصل کررہے ہیں۔ اس کے بعد ایڈلٹ ویب سائٹ پر جانے اور پورن دیکھنے پر یوزرس کو یہ باٹ ریکارڈ کر لیتا ہے۔سامنے آئی رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ متاثر یوزرس کا پونوگرافی میں ایک خاص ٹیسٹ ہوتا ہے اور ہیکر ان کے کمپیوٹر پر رموٹ کے ذریعہ کنٹرول حاصل کرلیتا ہے۔

ویڈیو بناکر مانگی جاتی ہے بڑی رقم

متاثر کی ویڈیو ریکارڈنگ کرنے کے بعد اسے میل بھیج کر بتایا جاتا ہے کہ اس کی ویڈیو بنا لی گئی ہے اور پیسے کی مانگ کی جاتی ہے۔ بتایا جارہا ہے کہ ویڈیو میں آدھی اسکرین پر براؤزر میں دیکھا جارہا کانٹینٹ یا پورن تو وہیں باقی آدھی اسکرین میں ویب کیم سے ریکارڈ اس کا ویڈیو ہے۔ اتنا ہی نہیں میل میں کہا جاتا ہے کہ متاثر کی کانٹینٹ لسٹ، فوٹو، پاس ورڈ ، بینک اکاؤنٹ ڈیٹا اور باقی ڈٹیلس کی ایک کاپی بنالی گئی ہے۔ اس کے بعد ایک انجان اکاؤنٹ میں پیسےبھیجنےکے بعد اسے چھوڑ دیا جاتا ہے۔

Loading...

رموٹ سروس پر ریکارڈ کر لیا جاتا ہے ویڈیو

ای میل میں متاثر کو یہ بھی بتایا جاتا ہے کہ اس کا ویڈیو رمورٹ سرور پرمحفوظ کر دیا گیا ہے۔ اس لئے پاس ورڈ بدلنے، وائرس ڈلیٹ کرنے، کمپیوٹر کو کلین کرنے یا رپیئر کرنے کا کوئی مطلب نہیں ہے۔ ساتھ ہی یہ بھی کہا جاتا ہےکہ اگر 72 گھنٹے میں رقم بتائے گئے اکاؤنٹ میں نہیں بھیجی گئی تو یہ ویڈیو فیملی اور دوستوں کو بھیجنے کے علاوہ فیس بک، ٹویٹر اور باقی سوشل میڈیا پلیٹ فارم پر اپلوڈ کر دیا جائے گا۔ میل میں یہ بھی کہا جاتا ہے کہ پروف کیلئے متاثر’’ یس‘‘ یعنی ہاں لکھ کر بھیج سکتا ہے اور بدلے میں ویڈیو اس کے 6 سب سے اہم کانٹیکٹس کو بھیج دیا جاتا ہے۔

 کمپیوٹر کرتا ہے ریکارڈVarenyky 

ای میل کے آخر میں لکھا ہوتا ہے، 'یہ آفر رقم کم زیادہ نہیں کرتا۔ میرا اور اپنا وقت برباد مت کرو اور اپنے ایکشن کے بدلے سامنے آنے والے نتیجوں کے بارے میں سوچو۔ دراصل   (ورینکی ) متاثر کی کمپیوٹر اسکرین ریکارڈ کرسکتا ہے پر یہ ویب کیم سے ریکارڈن نہیں کرسکتا۔ فی الحال ایسے معاملے اور ای میل میں کلئے گئے دعوے سے جڑا کوئی ثبوت سامنے نہیں آیا ہے۔ اتنا ضرور ہے کہ یوزر اسکرین پر کیا دیکھ رہا ہے اسے ریکارڈ کیاجاسکتا ہے اور اس کی بنیاد پر متاثر سے سیکس ٹارشن ممکن ہے۔