chhattisgarh assembly election results 2018 raman singh regime is over after 15 years of power– News18 Urdu

چھتیس گڑھ: ’چاول والے بابا‘ کا گڑھ منہدم، 15 سالہ اقتدارکا اس طرح ہوگیا خاتمہ

رمن سنگھ حکومت کے 15 سال کے کام کاج کی بنیاد پرالیکشن لڑرہی بی جے پی کو اس بارریاست کے عوام نے مسترد کردیا ہے اوراب کانگریس واضح اکثریت حاصل کرتی ہوئی نظرآرہی ہے۔

Dec 11, 2018 03:23 PM IST | Updated on: Dec 11, 2018 03:30 PM IST

چھتیس گڑھ اسمبلی الیکشن کے نتائج سے بی جے پی کو بڑا جھٹکا لگا ہے۔ بیشترایگزٹ پول میں ریاست میں کانٹے کی ٹکرنظرآرہی تھی، لیکن سب کا دعویٰ غلط ثابت ہوا۔ کانگریس ریاست میں یکطرفہ جیت کی طرف بڑھ رہی ہے۔ دراصل رمن سنگھ حکومت کے 15 سال کے کام کاج کی بنیاد پرالیکشن لڑرہی بی جے پی کو اس بارریاست کے عوام نے مسترد کردیا ہے۔

بی جے پی کی دلیل تھی کہ نکسلی علاقوں کے علاوہ پورے ریاست میں ترقی کے نام پرعوام رمن سنگھ کا ساتھ دے گی۔ ’چاول بنانے والے بابا‘ کے نام سے مشہوررمن سنگھ کی دیہی علاقوں میں مقبولیت بہت زیادہ تھی اوریہ بی جے پی کے لئے اچھی خبرہوتی تھی۔

چھتیس گڑھ: ’چاول والے بابا‘ کا گڑھ منہدم، 15 سالہ اقتدارکا اس طرح ہوگیا خاتمہ

چھتیس گڑھ میں رمن سنگھ کے اقتدار کا خاتمہ۔

Loading...

یہاں تک کہ بی جے پی لیڈراجیت جوگی اورمایاوتی کے درمیان ہوئے اتحاد کے بعد اس بات کی امید لگائے بیٹھے تھے کہ اس کا اثرپڑے گا اورکانگریس کو اس کا نقصان اٹھانا پڑے گا، لیکن ایسا کچھ نہیں ہو سکا۔ کچھ سیٹوں پراس کا اثربی جے پی کے بھی خلاف ہوا۔

اس سے قبل چھتیس گڑھ میں کانگریس پربی جے پی سبقت حاصل کرتی رہی ہے، لیکن بی جے پی کے ووٹوں کا فیصد تقریباً ایک فیصد ہی رہا ہے۔ اتنے معمولی فرق کے باوجود بی جے پی کانگریس پرسیٹوں کے معاملے میں آگے رہی ہے۔ اس باربھی بی جے پی کچھ اسی طرح کی امیدیں لئے بیٹھی تھی، لیکن ایسا نہ ہوسکا۔ بی جے پی کی ساری حکمت عملی رائیگاں ہوگئی اورچھتیس گڑھ میں کانگریس حکومت بنانے جارہی ہے۔

Loading...