کانگریس صدر راہل گاندھی کے پروگرام میں کانگریس اور بی جے پی کارکنوں کے درمیان جھڑپ– News18 Urdu

کانگریس صدر راہل گاندھی کے پروگرام میں کانگریس اور بی جے پی کارکنوں کے درمیان جھڑپ

کانگریس کے صدر راہل گاندھی کے دورے کے دوران، آج حکمران بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) اور کانگریس کارکنوں کے درمین جھڑپ ہوگئی۔

Jan 15, 2018 08:53 PM IST | Updated on: Jan 15, 2018 08:53 PM IST

رائے بریلی : کانگریس کے صدر راہل گاندھی کے دورے کے دوران، آج حکمران بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) اور کانگریس کارکنوں کے درمین جھڑپ ہوگئی۔ مسٹر گاندھی کا قافلہ سیلون سے نکل ہی رہا تھا، کہ بی جے پی کے بعض کارکنوں نے بینرز، پوسٹروں اور نعرے لگانے شروع کردئے۔ کانگریس کے قانون ساز کونسل کے رکن دیپک سنگھ کی پولیس سے کہا سنی ہوگئی ۔ مسٹر سنگھ کے مطابق، اس موقع پر موجود پولیس اہلکاروں نے بی جے پی کے کارکنوں کو نہیں روکا جبکہ سیلون سے بی جے پی کے رکن اسمبلی لال بہادر کوری کا الزام ہے کہ کانگریس کے حامیوں نے بی جے پی کارکنوں پر حملہ کیا۔

​​کانگریس کے سابق ایم ایل اے اور مسٹر گاندھی کے قافلے میں شامل اکھیلش پرتاپ سنگھ نے کہا کہ کانگریس کے صدر کے پروگرام سے بوکھلائی بی جے پی اس میں رکاوٹ ڈالنا چاہتی تھی۔ کانگریس کے صدر کے طور پر مسٹر گاندھی اپنے انتخابی حلقے میں پہلی بار آئے ہیں۔ جگہ جگہ بڑے پیمانے پر ان کا خیرمقدم کیا گیا تھا۔ اس سے بی جے پی گھبرا گئی ہے اور پروگرام میں رکاوٹ ڈالنےکی ناکام کوشش کی ہے۔

کانگریس صدر راہل گاندھی کے پروگرام میں کانگریس اور بی جے پی کارکنوں کے درمیان جھڑپ

کانگریس کے صدر راہل گاندھی: فائل فوٹو۔

مسٹر سنگھ نے کہا کہ قافلے میں تین یا چار نوجوان نے گھس کر افراتفری مچانے کی کوشش کی لیکن وہ اپنے منصوبے میں کامیاب نہیں ہو سکاے۔ دوسری طرف بی جے پی کے جنرل سیکرٹری وجے بہادر پھاٹک نے کہا کہ صدر گاندھی امیٹھی سے پارلیمانی رکن ہیں۔ مقامی نوجوان اگر ان سے بات کرنا چاہتے تھے ، تو انہیں سننا چاہئے۔