پی او کے کو پاکستان کا حصہ بتانے والے بیان پر فاروق عبداللہ کے خلاف بہار میں ایف آئی آر درج

سیتامڑھی : بہار کی ایک عدالت نے جموں و کشمیر کے سابق وزیر اعلی فاروق عبداللہ کے خلاف سیتامڑھی کے تھانے کو ایف آئی آر درج کرنے کا حکم دیا ہے۔ فاروق عبداللہ کے خلاف یہ حکم ہندوستانی فوج کے خلاف مبینہ توہین آمیز تبصرہ کے خلاف دائر عرضی کی سماعت پر دیا گیا ہے۔

Dec 12, 2015 10:34 PM IST | Updated on: Dec 12, 2015 10:34 PM IST
پی او کے کو پاکستان کا حصہ بتانے والے بیان پر فاروق عبداللہ کے خلاف بہار میں ایف آئی آر درج

سیتامڑھی : بہار کی ایک عدالت نے جموں و کشمیر کے سابق وزیر اعلی فاروق عبداللہ کے خلاف سیتامڑھی کے تھانے کو ایف آئی آر درج کرنے کا حکم دیا ہے۔ فاروق عبداللہ کے خلاف یہ حکم ہندوستانی فوج کے خلاف مبینہ توہین آمیز تبصرہ کے خلاف دائر عرضی کی سماعت پر دیا گیا ہے۔

سیتامڑھی کے چیف جوڈیشیل مجسٹریٹ (سی جے ایم) رام بهاري کی عدالت نے ایڈووکیٹ ٹھاکر چندن کمار سنگھ کی جانب سے دائر عرضی پر سماعت کے بعد سیتامڑھی کے ڈمرا تھانہ کو فاروق عبداللہ کے خلاف ایف آئی آر درج کرنے کا حکم دیا ۔ ساتھ ہی ساتھ تھانہ انچارج کو پورے معاملے کی جانچ کے لئے کہا گیا ہے۔

ایڈووکیٹ سنگھ نے اپنی عرضی میں کہا ہے کہ فاروق عبداللہ نے 27 نومبر کو جموں و کشمیر پر ہندوستان اور پاکستان کے قبضہ پر سوال اٹھاتے ہوئے فوج کی قابلیت پر بھی سوال اٹھایا تھا۔ یہ ہندوستانی فوج کی توہین ہے۔

انہوں نے کہا کہ فاروق عبداللہ کا بیان آئین کے آرٹیکل 19 (2) سیکشن (1) سب سیکشن(ا) کی خلاف ورزی ہے۔ اسی معاملے کو لے کر انہوں نے سیتامڑھی عدالت میں پیر کو ایک عرضی دائر کی تھی ۔

Loading...

قابل ذکر ہے کہ فاروق عبد اللہ نے کہا تھا کہ پی او کے پاکستان اور جموں و کشمیر ہندوستان کا حصہ رہے گا۔

Loading...