کشمیر میں پتھر بازوں سے نمٹنے کیلئے فورسز کو نئے طریقے سکھائے جارہے ہیں : ڈی جی سی آر پی ایف

سینٹرل ریزرو پولیس فورس (سی آر پی ایف) کے ڈائریکٹر جنرل راجیو رائے بٹناگر نے کہا کہ ریاستی پولیس اور نیم فوجی فورسز کو کشمیر میں پتھر بازی سے نمٹنے کے لئے نئے طریقے سکھائے جارہے ہیں۔

Aug 16, 2017 08:29 PM IST | Updated on: Aug 16, 2017 08:29 PM IST
کشمیر میں پتھر بازوں سے نمٹنے کیلئے فورسز کو نئے طریقے سکھائے جارہے ہیں : ڈی جی سی آر پی ایف

file photo

سری نگر: سینٹرل ریزرو پولیس فورس (سی آر پی ایف) کے ڈائریکٹر جنرل راجیو رائے بٹناگر نے کہا کہ ریاستی پولیس اور نیم فوجی فورسز کو کشمیر میں پتھر بازی سے نمٹنے کے لئے نئے طریقے سکھائے جارہے ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ مشتعل بھیڑ سے نمٹنے کے لئے نئے اسٹینڈرڈ آپریٹنگ پروسیجرس وضع کئے گئے ہیں۔

ڈائریکٹر جنرل نے بدھ کو یہاں ایک تقریب کے حاشیے پر نامہ نگاروں سے بات کرتے ہوئے کہا ’ہم نے جموں وکشمیر پولیس کے ساتھ مل کر نئی حکمت عملی ترتیب دی ہے۔ اس حکمت عملی میں پتھر بازی کے دوران غیرمہلک ہتھیاروں کا استعمال بھی شامل ہے‘۔

انہوں نے کشمیر میں جاری انسداد عسکریت پسندی کی کاروائیوں پر بات کرتے ہوئے کہا کہ سیکورٹی فورسز گذشتہ چند ماہ کے دوران کچھ اعلیٰ جنگجو کمانڈروں کو ہلاک کرنے میں کامیاب ہوئے ہیں۔ انہوں نے انسداد عسکریت پسندی کی حالیہ کاروائیوں کو مختلف سیکورٹی ایجنسیوں بشمول پولیس، فوج اور سی آر پی ایف کے درمیان بہتر تال میل کا نتیجہ بتاتے ہوئے کہا کہ وادی میں جنگجو مخالف کاروائیاں جاری رکھی جائیں گی۔

مسٹر بٹناگر نے کہا کہ وادی میں امسال جنگجو مخالف آپریشنوں کے دوران کم از کم 132 جنگجوؤں کو ہلاک کیا گیا۔ انہوں نے وادی میں سرگرم جنگجوؤں کی تعداد ظاہر کرنے سے معذرت ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ ہتھیار اٹھانے والے ہر شخص کو سیکورٹی فورسز کی کاروائی کا سامنا کرنا پڑے گا۔

Loading...

Loading...