دادری کے پاس چتوڑا گاؤں میں کشیدگی، بھاری پولیس فورس تعینات– News18 Urdu

دادری کے پاس چتوڑا گاؤں میں کشیدگی، بھاری پولیس فورس تعینات

دادری۔ بساہڑا میں ابھی ہنگامہ تھما بھی نہیں تھا کہ دادری کے پاس کے گاؤں چتوڑا میں زبردست کشیدگی پیدا ہو گئی۔

Oct 05, 2015 10:42 AM IST | Updated on: Oct 05, 2015 10:43 AM IST

دادری۔ بساہڑا میں ابھی ہنگامہ تھما بھی نہیں تھا کہ دادری کے پاس کے گاؤں چتوڑا میں زبردست کشیدگی پیدا ہو گئی۔ ہنگامہ مچنے کے بعد بڑی تعداد میں لوگ گاؤں میں جمع ہو گئے۔ حالات کی سنگینی کو دیکھتے ہوئے پولیس بھی فوراً حرکت میں آ گئی۔ کشیدگی کی خبر ملتے ہی فوری طور پر بڑی تعداد میں چتوڑا گاؤں میں پولیس فورس کی تعیناتی کر دی گئی ہے۔ یہی نہیں پولیس کے اعلی افسران نے رات بھر گاؤں میں کیمپ کیا۔ فی الحال گاؤں میں حالات پرامن اور قابو میں ہیں۔

غور طلب ہے کہ دادری کے بساہڑا گاؤں میں 28 ستمبر کو 50 سالہ اخلاق کو فرقہ پرستوں نے مبینہ ذبیحہ کے الزام میں پیٹ پیٹ کر بے رحمی سے قتل کردیا تھا۔  جبکہ ان کا جوان بیٹا دانش اب بھی ہسپتال میں ہے۔ اس درمیان وزیر اعلی اکھلیش یادو نے اخلاق کے خاندان سے لکھنؤ میں ملاقات کی اور 45 لاکھ روپے معاوضہ دینے کا اعلان بھی کیا ہے۔ حالانکہ اب پولیس نے لیڈران کے قافلے کو روکنے کے لئے پورے گاؤں میں بیریکیڈنگ کر دی ہے۔

دادری کے پاس چتوڑا گاؤں میں کشیدگی، بھاری پولیس فورس تعینات

Loading...

Loading...