آئی اے ایس یونس اور آئی پی ایس انجم نے قائم کی انسانیت کی نئی مثال ، شہید پرم جیت کی بیٹی کو لیا گود– News18 Urdu

آئی اے ایس یونس اور آئی پی ایس انجم نے قائم کی انسانیت کی نئی مثال ، شہید پرم جیت کی بیٹی کو لیا گود

صرف نعرے لگانے سے شہید اور ان کے خاندانوں کی مدد نہیں ہوتی ہے، اس کے لئے کوشش بھی کرنی ہوتی ہے۔

May 04, 2017 11:53 PM IST | Updated on: May 04, 2017 11:55 PM IST

شملہ : صرف نعرے لگانے سے شہید اور ان کے خاندانوں کی مدد نہیں ہوتی ہے، اس کے لئے کوشش بھی کرنی ہوتی ہے۔ ایسی ہی ایک کوشش کر کے نئی مثال قائم کی ہے آئی اے ایس یونس اور آئی پی ایس انجم نے۔ آئی اے ایس اور آئی پی ایس اس جوڑے نے کچھ ایسا کیا ہے کہ پورا ملک ان کی تعریف کررہا ہے۔ سرحد پر فوجیوں کے ساتھ کی گئی پاکستان کی بربریت نے اس جوڑے کو اندر تک جھنجھوڑ دیا ہے ، جس کے بعد انہوں نے شہید پرم جیت کی 12 سالہ بیٹی کو گود لینے کا فیصلہ کیا ہے۔

امراجالا کی ایک خبر کے مطابق یونس کلو میں ڈپٹی کمشنر ہیں اور ان کی اہلیہ سولن میں ایس پی ہیں ۔ انجم ملک کی دوسری مسلم آئی پی ایس ہیں۔ دونوں نے ترن تارن کے شہید پرم جیت کی بیٹی کو گود لینے کا فیصلہ لے کر نئی مثال قائم کی ہے۔ نوجوان جوڑے نے جب اپنے اس فیصلہ کے سلسلہ میں شہید پرم جیت کی بیوی سے بات کی ، تو وہ ان اس فیصلے سے انکار نہیں کر پائی۔ بچی اپنی ماں کے پاس ہی رہے گی ، لیکن تاعمر پڑھائی اور دیگر اخراجات یونس اور انجم برداشت کریں گے۔

آئی اے ایس یونس اور آئی پی ایس انجم نے قائم کی انسانیت کی نئی مثال ، شہید پرم جیت کی بیٹی کو لیا گود

یونس اور انجم کا چار سال کا ایک بیٹا ہے اور انہوں نے کہاکہ ہمیں خوشی ہے کہ بھائی کو بہن مل گئی ہے۔ دونوں نے کہاکہ ہم کوشش کریں گے بھائی بہن کے درمیان کا رشتہ گہرا رہے۔ جوڑے نے کہاکہ ان کی پوری کوشش ہوگی کہ بچی کی تعلیم میں کوئی کمی نہ آئے، اگر وہ آئی اے ایس یا آئی پی ایس بھی بننا چاہے گی ، تو ہم اس کی پوری مدد کریں گے۔ یہ دونوں جلد ہی شہید کے گھر بھی جائیں گے۔ یونس نے کہا کی سرحدوں کی حفاظت کرنے والے فوجیوں کے کنبوں کو اسی طرح کی حفاظت اور مدد کی ضرورت ہے تاکہ ان کا حوصلہ بڑھے۔