سنیل نارائن کی آئی پی ایل کی تیز ترین نصف سنچری ، کولکاتہ نے بنگلورکو ہراکر پلے آف کا دعوی کیا مضبوط

سنیل نارائن (54) کی آئی پی ایل کی تاریخ کی سب سے تیز نصف سنچری اور کرس لن (50) کی آتشی اننگ سے کولکاتا نائٹ رائڈرس نے رائل چیلنجرز بنگلور کو اتوار کو چھ وکٹ سے شکست دیدی۔

May 07, 2017 08:46 PM IST | Updated on: May 07, 2017 08:46 PM IST
سنیل نارائن کی آئی پی ایل کی تیز ترین نصف سنچری ، کولکاتہ نے بنگلورکو ہراکر پلے آف کا دعوی کیا مضبوط

photo : BCCI

بنگلور: سنیل نارائن (54) کی آئی پی ایل کی تاریخ کی سب سے تیز نصف سنچری اور کرس لن (50) کی آتشی اننگ سے کولکاتا نائٹ رائڈرس نے رائل چیلنجرز بنگلور کو اتوار کو چھ وکٹ سے شکست دے کر آئی پی ایل 10 کے پلےآف کے لئے اپنی دعویداری مضبوط کر لی۔ کولکتہ نے بنگلور کو چھ وکٹ پر 158 رن پر روکنے کے بعد نارائن اور لن کے طوفانی حملوں سے اس ہدف کو جیسے مذاق بنا کر رکھ دیا۔کولکتہ نے 15.1 اوور میں چار وکٹ پر 159 رن بنا کر 29 گیند باقی رہتے یکطرفہ جیت اپنے نام کی۔ کولکتہ کی 12 میچوں میں یہ آٹھویں جیت ہے اور اس نے 16 پوائنٹس کے ساتھ پلےآف کی اپنی دعویداری مضبوط کر لی ہے۔دوسری طرف بنگلور کی شرمناک کارکردگی جاری رہی اور اس کو 13 میچوں میں 10 ویں شکست کا سامنا کرنا پڑا۔ جاری۔ یو این آئی۔ این اے۔ این یو۔

ویسٹ انڈیز کے نارائن نے محض 15 گیندوں میں نصف سنچری بنا كر آئی پی ایل کی تاریخ کی سب سے تیز نصف سنچری کی برابری کر لی۔کولکاتا کے ہی یوسف پٹھان نے 2014 میں حیدرآباد کے خلاف 15 گیندوں میں نصف سنچری بنائی تھی۔نارائن اور لن نے چھ اوور کے پاورپلے میں 105 رن بنائے جو آئی پی ایل کی تاریخ میں پاورپلے میں سب سے زیادہ رنز ہیں۔یہ دوسرا موقع ہے جب کسی ٹیم نے پاورپلے میں 100 سے زیادہ رن بنائے ہیں۔

اس سے قبل کرس گیل، وراٹ کوہلی اور اے بی ڈیولیرس کی تری مورتی کی سپر فلاپ کارکردگی کے درمیان ٹریوس ہیڈ (ناٹ آؤٹ 75) اور مندیپ سنگھ (52) کی شاندار نصف سنچریوں سے رائل چیلنجرز بنگلور نے کولکتہ نائٹ رائڈرس کے خلاف آئی پی ایل 10 مقابلے میں اتوار کو چھ وکٹ پر 158 رن کا مشکل اسکور بنا لیا تھا ۔ آسٹریلوی کھلاڑی ٹریوس ہیڈ نے زبردست شاٹ لگاتے ہوئے صرف 47 گیندوں پر تین چوکوں اور پانچ چھکوں کی مدد سے ناقابل شکست 75 رنز کی اننگز کھیلی جس کی بدولت بنگلور کی ٹیم 158 تک پہنچ پائی۔ہیڈ نے اننگز کے آخری اوور میں امیش یادو کی آخری تین گیندوں پر دو چھکے اور ایک چوکا لگایا۔اس اوور میں کل 21 رن پڑے جس نے بنگلور کی حالت کو درست کیا۔

ٹریوس کے اٹیک کی وجہ سے ہی بنگلور آخری پانچ اوورز میں 53 رن جوڑ پایا۔گیل (صفر)، کپتان وراٹ (پانچ) اور ڈی ولیرس (10) کے 34 رن کے اسکور تک پویلین لوٹ جانے کے بعد مندیپ اور ہیڈ نے چوتھے وکٹ کے لئے 71 رن کی اہم شراکت کی۔ مندیپ نے 43 گیندوں پر 52 رن میں چار چوکے اور ایک چھکا لگایا۔مندیپ ٹیم کے 105 کے اسکور پر آؤٹ ہوئے۔اس کے بعد کیدار جادھو نے آٹھ اور پون نیگی نے پانچ رنز بنا کر ہیڈ کو اچھا تعاون دیا جنہوں نے دوسرے سرے سے تابڑ توڑ شاٹ لگائے۔

Loading...

فاسٹ بولر امیش یادو نے چار اوور میں 36 رن دے کر گیل، وراٹ اور نیگی کے وکٹ لئے۔ یادو کے پہلے تین اوور میں صرف 15 رنز پڑے تھے لیکن ہیڈ کے اٹیک کی وجہ سے آخری اوور میں 21 رن پڑ گئے۔اسپنر سنیل نارائن نے چار اوور میں 29 رن دے کر ڈی ولیرس اور مندیپ کے وکٹ لئے۔کرس ووکس نے 39 رن دے کر جادھو کا وکٹ لیا۔

جیت کے لئے 159 رن کے تعاقب میں نارائن نے 17 گیندوں پر 54 رن میں چھ چوکے اور چار چھکے اڑايے اور اپنے ٹوئنٹی 20 کیریئر کی پہلی نصف سنچری بنائی۔ ان کا پچھلا بہترین اسکور 42 رنز تھا۔نارائن کو دیکھ کر لن نے بھی تیور بدلے اور 22 گیندوں میں 50 رن میں پانچ چوکے اور چار چھکے اڑايے۔ نارائن کا وکٹ 105 اور لن کا وکٹ 107 کے اسکور پر گرا۔پہلے وکٹ کے لئے 6.1 اوور میں 105 رن بننے کے بعد ر ن بنانے کی رفتار کچھ سست ہو گئی اور کولکتہ نے 15.1 اوور میں ہدف حاصل کیا۔کولن ڈی گرینڈهوم نے 28 گیندوں میں 31 رن میں ایک چوکا اور دو چھکے لگائے۔

ہدف کے قریب پہنچتے پہنچتے کپتان گوتم گمبھیر 14 رنز بنا کر آؤٹ ہو گئے۔ گمبھیر کا وکٹ 156 کے اسکور پر گرا۔منیش پانڈے (ناٹ آؤٹ چار) اور یوسف پٹھان نے ٹیم کو فتح کی منزل پر پہنچایا۔ لن نے ہدف کا تعاقب کرتے ہوئے زوردار شروعات کی اور انكت چودھری کے پہلے ہی اوور میں دو چوکے اور ایک چھکا جڑ دیا۔نارائن نے سیموئیل بدری کو اگلے اوور میں ایک چوکا لگایا لیکن لن نے تیسرے اوور میں يجوینندر چہل پر دو چوکے اور ایک چھکا مارا۔

چوتھے اوور میں تو جیسے طوفان آگیا اور نارائن نے ہم وطن بدری کی گیندوں پر مسلسل تین چھکے اور ایک چوکا اڑا کر 25 رن بنا ڈالے۔نارائن نے سری ناتھ اروند کو بھی نہیں بخشا اور اننگز کے پانچویں اوور میں اروند پر مسلسل تین چوکے لگانے کے بعد پانچویں گیند پر چھکا لگا کر آئی پی ایل کی سب سے تیز نصف سنچری مکمل کر لی ۔ نارائن نے اس اوور کی آخری گیند پر چوکا مارا اور اس اوور میں 26 رن پڑے۔لن نے چہل کے اگلے اوور میں دو چھکے اور ایک چوکا لگایا۔نارائن آخر ساتویں اوور کی پہلی گیند پر چودھری کا شکار بنے۔ان کا کیچ وکٹ کیپر کیدار جادھو نے پکڑا۔پون نیگی نے آٹھویں اوور میں لن کو اپنا شکار بنایا۔ان دو بلے بازوں کے آؤٹ ہوتے ہی رن رفتار کچھ سست ہو گئی۔

گرینڈهوم 31 رن بنانے کے بعد نیگی کی گیند پرا سٹمپ ہو گئے جبکہ گمبھیر کو چهل نے نیگی کے ہاتھوں کیچ کرایا۔کولکتہ نے جہاں 6.1 اوور میں 105 رن جوڑے تھے لیکن اس کے بعد نو اوور میں صرف 54 رن بنے ۔ نیگی نے 21 رن پر دو وکٹ، چودھری نے 19 رن پر ایک وکٹ اور چہل نے 39 رن پر ایک وکٹ لیا۔ نارائن کو ان کی آتشی نصف سنچری اور چار اوور میں 29 رن پر دو وکٹ کی آل راؤنڈ کارکردگی کیلئے مین آف دی میچ کا ایوارڈ دیا گیا۔

Loading...