jammu kashmir mob lynching bhadarwah killing snm جموں: رمضان میں مبینہ گئو رکشکوں کے ہاتھوں شہری کے قتل کے بعد سخت کشیدگی۔ کرفیو نافذ– News18 Urdu

جموں: رمضان میں مبینہ گئو رکشکوں کے ہاتھوں شہری کے قتل کے بعد سخت کشیدگی۔ کرفیو نافذ

رمضان المبارک کے اس مقدس مہینے میں بھی جموں و کشمیر میں کشیدگی جاری ہے۔ جموں وکشمیر کے ضلع ڈوڈہ میں فرقہ وارانہ فسادات کے لئے حساس قصبہ بھدرواہ میں مبینہ گئو رکشکوں نے فائرنگ کرکے ایک شخص کو ہلاک کیا جبکہ دوسرے ایک کو زخمی کردیا ہے۔

May 16, 2019 04:59 PM IST | Updated on: May 16, 2019 05:09 PM IST

رمضان المبارک کے اس مقدس مہینے میں جہاں ہر طرف امن و سکون کی دعائیں مانگی جارہی ہیں۔ وہیں اس درمیان جموں وکشمیر کے ضلع ڈوڈہ میں فرقہ وارانہ فسادات کے لئے حساس قصبہ بھدرواہ میں مبینہ گئو رکشکوں نے فائرنگ کرکے ایک شخص کو ہلاک کیا جبکہ دوسرے ایک کو زخمی کردیا ہے۔ قصبہ میں شدید کشیدگی کا سبب بننے والا یہ واقعہ جمعرات اور جمعہ کی درمیانی رات کو پیش آیا ہے۔ فائرنگ کیلئے دیسی ساختہ رائفل کا استعمال کیا گیا ہے۔ انتظامیہ نے پیدا شدہ کشیدہ صورتحال پر قابو پانے کے لئے قصبہ میں کرفیو نافذ کرکے ریاستی پولیس اور سی آر پی ایف کی بھاری نفری کے ساتھ ساتھ فوج بھی تعینات کرادی ہے۔ اس کے علاوہ ضلع بھر میں موبائل انٹرنیٹ خدمات منقطع کی گئی ہیں۔

موصولہ اطلاعات کے مطابق مبینہ گئو رکشکوں کے ہاتھوں 50 سالہ نعیم احمد شاہ کی ہلاکت کے خلاف قصبہ بھدرواہ میں لوگوں کی ایک بڑی تعداد نے جمعرات کی علی الصبح شدید احتجاجی مظاہرے کئے۔ مشتعل مظاہرین نے پولیس تھانہ بھدرواہ پر پتھراؤ کیا جبکہ پولیس نے انہیں منتشر کرنے کے لئے آنسو گیس کے گولے داغے۔ مشتعل مظاہرین نے دو سہ پہیہ اور ایک دو پہیہ گاڑی کو آگ لگادی۔ اس کے علاوہ متعدد گاڑیوں کو نقصان پہنچایا۔

جموں: رمضان میں مبینہ گئو رکشکوں کے ہاتھوں شہری کے قتل کے بعد سخت کشیدگی۔ کرفیو نافذ

علامتی تصویر

سرکاری ذرائع نے بتایا کہ صورتحال پر قابو پانے کے لئے انتظامیہ کو قصبے میں کرفیو کے نفاذ کے علاوہ فوج تعینات کرنی پڑی۔ انہوں نے بتایا کہ ضلع ڈوڈہ کے بیشتر سینئر افسران بشمول ضلع مجسٹریٹ، ایس ایس پی اور فوجی افسر بھدرواہ پہنچے جہاں وہ صورتحال کو خود مانیٹر کررہے ہیں۔

Loading...