جیون سمواد: خوف کا سامنا اعتماد ویقین سے کریں

زندگی، ہنر سے زیادہ حوصلہ کا امتحان ہے۔ جو فیصلہ کرتا ہے، ڈٹا رہتا ہے ، زندگی اس کو ہی سلام کرتی ہے۔

Jul 23, 2019 03:41 PM IST | Updated on: Jul 23, 2019 03:43 PM IST
جیون سمواد: خوف کا سامنا اعتماد ویقین سے کریں

رجت پیشہ کے اعتبار سے ایک استاذ ہیں۔ وہ مدھیہ پردیش کےاندور میں رہتے ہیں۔ انہیں پڑھانا پسند ہے۔ بچوں سے پیار کرتے ہیں۔ تین ماہ پہلے کی بات ہے۔ انہوں نے ’ ڈئیر زندگی‘ جیون سمواد کو لکھا کہ وہ ایک موبائل کی کمپنی میں ایچ آر کی نوکری چھوڑنا چاہتے ہیں۔ کیونکہ وہ اپنے کام میں کچھ نیاپن نہیں دیکھتے ہیں۔ ہم نے ان سے پوچھا کہ کیا کرنا چاہتے ہیں تو انہوں نے پڑھانے کی خواہش ظاہر کی۔ میں نے کہا کہ پڑھانے سے اگر اتنی ہی دلچسپی ہے تو پھر اسی کام میں کیوں نہیں لگ جاتے۔ انہیں میری بات پسند آئی۔ لیکن پھر کہا کہ یہ کام ابھی تک نہیں کیا تو انہیں موقع کیسے ملے گا۔

رجت کی بات تکنیکی اعتبار سے درست تھی لیکن اس میں صرف ایک کمی تھی۔ رجت شرما، اپنے ہی بارے میں کچھ بھول گئے تھے۔ رجت ایم اے ہندی میں بنارس ہندو یونیورسیٹی کے گولڈ میڈلسٹ ہیں۔ ان کے تحقیقی مقالے معروف رسالوں میں چھپ چکے تھے۔ سب سے بڑی بات یہ ہے کہ انہیں ہندی سے اتنا ہی پیار ہے جتنا کہ اساتذہ اور بچوں سے انہیں پیار ہے۔

Loading...

رجت ’ ڈپریشن اور خودکشی کے خلاف‘ اس کوشش کے اولین قارئین میں سے ہیں۔ میری درخواست پر وہ اندور کے کچھ معروف اسکولوں میں درخواست دینے کے لئے تیار ہو گئے۔ تقریبا 10 اسکولوں میں ان کی درخواست مسترد کر دی گئی۔ لیکن بالآخر، 11 ویں بار ان کو کامیابی مل گئی۔ وہ جب بھی مایوس ہوئے، میں نے ان سے صرف اتنا کہا’’ اس لئے مت ڈرئیے کہ لوگ کیا کہیں گے۔ کیونکہ ’ لوگ‘ کہنے کے علاوہ کچھ نہیں کرتے۔ وہ جو آپ نے چھوڑا ہے، آپ کی زندگی کے لئے چھوڑے جانے کے لائق ہی تھا۔ بغیر کچھ چھوڑے آج تک کسی کو کچھ بھی حاصل نہیں ہوا ہے‘‘۔

رجت کے لئے نوکری چھوڑ کر’ تمنا‘ کے لئے نکل جانا اور اس کے بعد کامیاب ہونا اتنا ہی آسان اور مشکل ہے جیسا ایک کوہ پیما کے لئے اس کا سفر!۔ سب کچھ آسان بھی ہے اور سب کچھ مشکل بھی۔ اس بات کو کبھی بھی نظریاتی طور پر فلسفہ کا موضوع کا مان کر مسترد مت کیجئے۔ میرا اس بات میں بہت پختہ یقین ہے کہ جیسے پانی کسی ڈوبنے والے کو تین موقع دیتا ہے بچنے کا( ایسا ہمارے گاؤں میں کہا جاتا ہے، گہری ندی بھی تین بار موقع دیتی ہے باہر نکلنے کے لئے) ٹھیک ویسے ہی زندگی بھی ہر کسی کو کم سے کم تین مواقع ضرور دیتی ہے۔

ہاں، بس اتنا ضرور ہے کہ اکثر وبیشتر ہم ان مواقع کو پہچاننے میں غلطی کر جاتے ہیں۔ زندگی، ہنر سے زیادہ حوصلہ کا امتحان ہے۔ جو فیصلہ کرتا ہے، ڈٹا رہتا ہے ، زندگی اس کو ہی سلام کرتی ہے۔

رجت جیسے خیالات ہم سبھی کو اکثر آتے رہتے ہیں۔ لیکن ہم اسے اتنی تیزی سے جانے۔ انجانے میں مسترد کرتے رہتے ہیں۔ خوابوں کے سفر کے تئیں خودسپردگی، وفاداری اور یقین ہی زندگی میں اسے پانے کا راستہ ہے۔ اس لئے میری گزارش ہے کہ جب بھی کوئی ڈر آپ کو ستائے، آپ کی بانہوں میں اندیشوں کی بیڑیاں ڈالنا چاہے تو اس کا مقابلہ آپ ہمیشہ زندگی کے یقین سے کریں۔

Email: dayashankarmishra2015@gmail.com

Address: Jeevan Sanvad (Dayashankar Mishr)

Network18

Express Trade Tower,3rd Floor, A Wing,

Sector 16, A, Film City, Noida (UP)

اپنے سوالات اور مشورے انباکس میں شئیر کریں

(https://twitter.com/dayashankarmi )(https://www.facebook.com/dayashankar.mishra.54 )

Loading...