آٹھ سو کروڑ کے لون ڈیفالٹ کیس میں "روٹومیک پین" کے مالک کو سی بی آئی نے کیا گرفتار– News18 Urdu

آٹھ سو کروڑ کے لون ڈیفالٹ کیس میں "روٹومیک پین" کے مالک کو سی بی آئی نے کیا گرفتار

روٹومیک پین"بنانے والی کمپنی کے مالک وکرم کوٹھری کو 800کروڑروپئے کے لون ڈیفالٹ کیس میں سی بی آئی نے گرفتار کر لیا ہے۔سی بی آئی کے سرکاری ترجمان نے پیر کی صبح بتایا کہ وکرم کوٹھری ان کی اہلیہ اور بیٹے سے کانپور کے ان کی رہائش گاہ میں پوچھ تاچھ کی گئی ۔حاصل جانکاری کے مطابق اس پوچھ تاچھ کے بعد سی بی آئی نے کوٹھری کو گرفتار کر لیا۔واضح ہو کہ کوٹھری ے خلاف بینک آف بڑودا نے سی بی آئی میں شکاہت درج کرائی تھی۔

Feb 19, 2018 01:05 PM IST | Updated on: Feb 19, 2018 01:05 PM IST

کانپور۔ روٹومیک  پین"بنانے والی کمپنی کے مالک وکرم کوٹھری کو 800کروڑروپئے کے لون ڈیفالٹ کیس میں سی بی آئی نے گرفتار کر لیا ہے۔سی بی آئی کے سرکاری ترجمان نے پیر کی صبح بتایا کہ وکرم کوٹھری ان کی اہلیہ اور بیٹے سے کانپور کے ان کی رہائش گاہ میں پوچھ تاچھ کی گئی ۔حاصل جانکاری کے مطابق اس پوچھ تاچھ کے  بعد سی بی آئی نے کوٹھری کو گرفتار کر لیا۔

واضح ہو کہ کوٹھری ے خلاف بینک آف بڑودا نے سی بی آئی میں شکاہت درج کرائی تھی۔جس کے بعد سی بی آئی نے کانپور میں کوٹھری کے ٹھکانوں پر چھاپہ مارا۔بتادیں کہ وکرم کوٹھری پر الزام ہیکہ انہوں نے سرکاری بینکوں سے 3600کروڑ روپئے کا لون لیا تھا۔جس میں800کروڑ واپس نہیں دئے۔

آٹھ سو کروڑ کے لون ڈیفالٹ کیس میں

ذرائع کے مطابق کا نپور میں واقع روٹو میک کمپنی کے مالک وکرم کوٹھری نے 5سرکاری بینکوں سے 800کروڑ روپئے سے زیادہ لون لیا تھا۔بتایا جا رہا ہیکہ الہ آباد بینک،بینک آف ابڑودا،انڈین اوورسیز بینک اور یونین بین آف انڈیا نے قانون کو طاق پر رکھ کر وکرم کوٹھری کو اتنا بڑا لون دیا۔ وکرم کوٹھری نے سب سے زیادہ ینین بینک آف اندیا سے 485کروڑ کا لون لیاہے۔اس نے الہ آباد بینک سے بھی 352کروڑ کی رقم کا قرض لیا تھا لیکن ایک سال ہو جانے کے باوجود اس نے بینکوں کو نہ تو لئے گئے لون پر بیاز چکایا ہے اور نہ ہی لون واپس لوٹایا ہے۔

ملی جانکاری کے مطابق مال روڈ پر واقع ان کا آفس گزشتہ ایک ہفتے سے بند ہے۔سوشل میڈیا پر ان کے ملک چھوڑ کر بھاگنے کی خبریں چھائی ہوئی تھیں۔اتوار کو انہوں نے بیان جاری کرکے کہا کہ وہ کانپور میں ہی ہیں۔  

حالانکہ یونین بینک آف انڈیا اور الہ آباد بینک کے ذرائع کا کہنا ہیکہ کوٹھری نے لون لی گئی رقم کا بیاز تک نہیں دیاہے۔بینک کے اندرونی ذرائع کے مطابق کوٹھری کو لون دینے کیلئے قائدے قانون کے ساتھ سمجھوتہ کیا گیا ہے۔

بینک افسر نے کہا کہ وہ مال روڈ پر واقع روٹومیک کے آفس جا رہے ہیں لیکن وہ بند ہے۔انہوں نے الزام لگایا ہیکہ کوٹھری سے فون پر بات کرنے کی انہوں نے کوشش کی لیکن کوئی فائدہ نہیں ہوا۔

حالانکہ اس معاملے کے سرخیوں میں آنے کے بعد وکرم کوٹھری میڈیا کے سامنے آئے اور کہا کہ انہوں نے بینک سے لون ضرور لیا ہے لیکن لون ادا نہ کرنے کی بات غلط ہے۔انہوں نے کہا کہ ان کا بینک کا این سی ایل ٹی کے اندر کیس چل رہا ہے۔ تنازعہ کا نتیجہ نکل آئیگا۔وہیں ملک چھوڑ کر بھاگنے کے سوال پرانہوں ںے کہا،"میں کانپور کا رہنے والا ہوں ،کانپور میں ہی رہوں گا،ہندستان سے بہتر کوئی ملک نہیں ہے"۔

Loading...